.

عراق : پارلیمانی انتخابات کے سلسلے میں آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں آج قبل از وقت پارلیمانی انتخابات کا انعقاد ہو رہا ہے۔ البتہ بدعنوانی اور مسلح گروپوں کے کنٹرول کے سبب بنیادی تبدیلی واقع ہونے کی امیدیں بہت کم ہیں۔

پولنگ کا عمل آج صبح مقامی وقت کے مطابق صبح سات بجے ہوا اور توسیع نہ ہونے کی صورت میں پولنگ کا اختتام شام چھ بجے ہو جائے گا۔

وزیر اعظم مصطفی الکاظمی نے اپنا ووٹ دارالحکومت بغداد کے ایک پولنگ مرکز میں ڈالا۔

اگرچہ حکومت نے تمام عراقیوں پر زور دیا ہے کہ وہ تبدیلی اور اصلاح کی خاطر انتخابات میں شریک ہوں تاہم ماہرین نے توقع ظاہر کی ہے کہ ووٹنگ کا تناسب زیادہ نہیں رہے گا۔

عراق میں 2.5 کروڑ رجسٹرڈ ووٹرز اپنی رائے دینے کا حق رکھتے ہیں۔ مبصرین کے نزدیک اس انتخابات میں عوامی بائیکاٹ کا ریکارڈ تناسب سامنے آ سکتا ہے۔ انتخابات کے موقع پر عراق میں سخت سیکورٹی اقدامات کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ انتخابات میں اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے بین الاقوامی مبصرین بھی شریک ہیں۔

آج پارلیمنٹ کے 329 ارکان کے چُناؤ کے لیے ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔ اس سلسلے میں 3240 نامزد امیدواروں کے بیچ مقابلہ ہے۔

توقع ہے کہ پولنگ کا عمل ختم ہونے کے بعد 24 گھنٹوں کے اندر ابتدائی نتائج جاری کر دیے جائیں گے۔ انتخابی کمیشن کے مطابق نتائج کا سرکاری اعلان 10 روز میں ہو گا۔