.

دو سال بعد ہرن کو ٹائر کے طوق سے نجات دلا دی گئی: ویڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ان دنوں سوشل میڈیا پر ایک ایسے مردہ کی ویڈیو وائرل ہورہی ہےجس کی گردن میں ایک ٹائر پھنسا ہوا دیکھا جا سکتا ہے۔

یہ ویڈیو امریکا میں سامنے آئی اور یہ ہرن بھی امریکا ہی کے ایک جنگل میں دو سال قبل دیکھا گیا تھا۔ مقامی سطح پر اس کا نام’Elk‘ [ایلک] بتایا جاتا ہے۔ اس ہرن کی نسل اب نایاب ہوتی جا رہی ہے۔ تاہم مذکورہ ہرن کو دو سال قبل زندہ حالات میں دیکھا گیا۔ اس کی گردن میں ایک ٹائر لٹکا ہوا تھا۔

تفصیلات کے مطابق آج سے دو سال قبل امریکا میں ’تحفظ جنگلی حیات کمیٹی‘ کے ایک افسرنے اس ہرن کو ریاست کولوراڈو کے ’ڈینور‘ شہر کے ایک جنگلی علاقے میں دیکھا۔ اس وقت اس کی گردن میں ایک ٹائر پھنسا ہوا تھا۔ اس افسر نے ہرن کی ایک ویڈیو بنائی۔ یہ ویڈیو آپ بھی دیکھ سکتے ہیں۔

امریکی محکمہ جنگلی حیات کے افسر’اسکاٹ مورڈوچ‘ نے جولائی 2019ء میں وسطی امیرکی ریاست کے ایک جنگل میں دیکھا۔ اس کے بعد دو سال تک اس کی تلاش جاری ہی۔ حال ہی میں اس ہرن کو ایک بار پھر دیکھا گیا تو اس کی گردن میں وہ ٹائر بدستور موجود تھا۔ تحفظ جنگلی حیات کے اہلکاروں نے اسے بے ہوش کرنے کے لیے ایک دور سے بے ہوشی کا انجیکشن لگایا تاکہ ہرن کی گردن سے عذاب کے طوق کو نکالا جا سکے۔

سینگوں کی کٹائی

ٹائر والے ہرن کے بارے میں سامنے آنے والی معلومات کے مطابق بے ہوش کرنے کے بعد گردن سے پہیہ نکالنے کے لیے اس کے پانچ لمبے سینگ کاٹے گئے۔ اس کا وزن کیا گیا تو وزن 270 کلو گرام نکلا جب کہ اس کی عمر ساڑھے چار سال بتائی جاتی ہے۔

اسے پکڑنے کے لیے ایک سال میں چار کوششیں کی گئیں۔ Colorado Parks and Wildlife کے مطابق مرڈوچ اوراس کے ساتھی نے فولای پہیے کواس کی گردن سے نکالنے کےلیے سینگ کاٹے۔ اس ٹائر کا وزن 16 کلو گرام ہے۔ ہرن کو ٹائر کے طوق سے نجات دلانے کے بعد اسے ڈینفر شہر کے ایک پارک میں منتقل کردیا گیا ہے جہاں اب وہ پہلے سے بہتر حالت میں زندگی گذار رہا ہے۔