تونسی صدر کی سابق صدر سے سفارتی پاسپورٹ واپس لینے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

تونس کے صدر قیس سعید نے جمعرات کو اعلان کیا ہےکہ وہ حالیہ بیانات کے بعد سابق صدر منصف مرزوقی کا سفارتی پاسپورٹ واپس لے لیں گے۔

خبر رساں ادارے ’رائیٹرز‘کے مطابق صدر قیس سعید نے وزیر انصاف کو ہدایت کی کہ وہ ریاستی سلامتی کے خلاف سازش کے الزامات پر عدالتی تحقیقات شروع کرائیں۔

انہوں نے کابینہ کے اجلاس میں مرزوقی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا: "آپ جانتے ہیں کہ کس طرح کسی نے بیرون ملک جا کر تونس کے مفادات کے خلاف مدد مانگی اور میں آج یہ کہتا ہوں جس نے بھی ایسا کیا وہ اپنا سفارتی پاسپورٹ کھود دے گا کیونکہ وہ تونس کے دشمنوں میں شامل ہے "۔ ان کا اشارہ سابق صدر منصف المرزوقی کی جانب تھا۔

قیس سعید
قیس سعید

مرزوقی کی صدارتی نظام پر تنقید

یہ بات قابل ذکر ہے کہ تونس کے سابق صدر منصف مرزوقی نے گذشتہ ہفتے فرانس میں ایک احتجاج کے دوران تونس میں صدارتی نظام کو ’آمرانہ‘ قرار دیا تھا۔ مقامی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق سابق صدر کو اپنے بیانات کا جواب دینا پڑے گا۔

ان بیانات کے بعد "ڈپلومیٹک کور سنڈیکیٹ" نے گذشتہ ہفتے مطالبہ کیا کہ مرزوقی کا سفارتی پاسپورٹ واپس لیا جائے کیونکہ فرانس میں انہوں نے موجودہ تونسی حکومت کے خلاف اکسایا تھا۔

انہوں نے مرزوقی کے الفاظ کو خطرناک اور تونس کے خلاف اکسانےکی کوشش قرار دیتے ہوئے ان پر الزام لگایا کہ وہ اگلے ماہ تونس میں منعقد ہونے والے فرانکوفونی کے 50 ویں سربراہی اجلاس کو ناکام بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں