عراق: کرونا کے سبب دو ماہ قبل فوت ہونے والی خاتون انتخابات میں فتح یاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

عراق میں گذشتہ اتوار کے روز منعقد ہونے پارلیمانی انتخابات میں شائد انوکھی ترین بات یہ ایک خاتون امیدوار کی جیت تھی جو دو ماہ پہلے ہی دنیا سے رخصت ہو چکی ہیں۔ جی ہاں ایسا واقعتا ہوا ہے !

گذشتہ دنوں کے دوران عراقی حلقوں میں اس بات پر ہنگامہ مچا ہوا ہے کہ بغداد صوبے میں انتخابات لڑنے والی خاتون انسام مانوئیل 2397 ووٹوں کے ساتھ کامیاب ہو گئیں جب کہ درحقیقت کرونا وائرس سے متاثر ہونے کے سبب تقریبا دو ماہ قبل ان کا انتقال ہو چکا ہے۔

انسام کے اہل خانہ نے فیس بک پر ان کے پیج پر جاری وضاحت میں بتایا کہ "متوفیہ امیدوار" نے انتخابات میں آزاد حیثیت سے شرکت کا اعلان کیا تھا تاہم اگست میں انہیں کرونا نے آ دبوچا۔ وہ 35 روز تک ہسپتال میں رہنے کے بعد دنیا سے رخصت ہو گئیں۔

یاد رہے کہ قانونی پہلو سے انسام کی جگہ وہ امیدوار لے گا جو متوفیہ کے بعد ووٹوں کی تعداد کے لحاظ سے دوسرے نمبر پر رہا۔

واضح رہے کہ کابینہ کے سکریٹریٹ کے اعلان کے مطابق حالیہ قبل از وقت پارلیمانی انتخابات میں پورے عراق میں 97 خواتین نے کامیابی حاصل کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں