.

لیبیا سے غیرملکی جنگجوؤں کے انخلا پر اتفاق رائے موجود ہے: بن فرحان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

العربیہ اور الحدث کو دیے گئے ایک انٹرویو میں سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کہا ہے کہ "مملکت کے وژن نے ہمیشہ لیبیا کے لوگوں کے مسائل کو حل کرنے کی صلاحیت پر زور دیا ہے۔"

انہوں نے مزید کہا کہ طرابلس میں دوست ممالک کی کانفرنس کا انعقاد اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ لیبیا کے عوام کے مسائل کے حل میں عرب ممالک سنجیدہ ہیں اور تمام عرب ممالک غیر ملکی افواج کی لیبیا سے نکلنے کی ضرورت پرمتفق ہیں۔

کویت کے وزیر خارجہ اور وزیرمملکت الشیخ ڈاکٹر احمد الناصر جنہوں نے لیبیا کے حوالے سے ہونے والے اجلاس میں شرکت کی نے کہا کہ کویت 24 دسمبر کو طے شدہ تاریخ پر لیبیا کے انتخابات کے انعقاد کی حمایت کرتا ہے۔

لیبیا کے استحکام کی حمایت میں منعقد ہونے والی کانفرنس میں سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان ، مصر کے سامح شکری ، فرانس کے جین یوز لی ڈریان ، الجیریا کے رامطان لعامرا ، اور کویت کے احمد ناصر الصباح سمیت ممتاز عرب اور بین الاقوامی حکام نے شرکت کی۔

کانفرنس کے افتتاحی خطاب میں لیبیا کے وزیر اعظم عبدالحمید الدبیبہ نے کہا کہ طرابلس میں اس کانفرنس کا انعقاد شہرکو لیبیا کے دارالحکومت کے طور بحال کرنے علامتی کوش ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ برادر اور دوست ممالک کی کوششوں نے لیبیا میں جنگ کو روکنے میں اہم کردار ادا کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم سپریم الیکشن کمیشن کی حمایت کرتے ہیں کہ انتخابات وقت پر کرائے جائیں۔ تمام لیبیا والوں کو انتخابات کے متوقع نتائج کا احترام کرنا چاہیے۔