.

شاہ عبداللہ ڈائیلاگ سینٹر کا صدر دفتر ویانا سے پرتگال منتقل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز بین الاقوامی مرکز برائے بین المذاہب اور بین الثقافتی مکالمہ (کائیسیڈ) نے اعلان کیا کہ اس نے اپنا صدر دفتر آسٹریا کے دارالحکومت ویانا سے پرتگالی دارالحکومت لزبن منتقل کر دیا ہے۔

شاہ عبداللہ بین المذاہب مکالمہ مرکز کے بانی ممالک کی کونسل آف میں سعودی عرب، جمہوریہ آسٹریا، مملکت اسپین، ویٹیکن، بانی رکن ارکان ہیں جب کہ پرتگال کو مبصر رکن کا درجہ حاصل ہے۔ حال ہی میں شاہ عبداللہ مرکز نے پرتگالی حکومت کے ساتھ ’کائیسیڈ‘ کے ہیڈ کواٹر کی لزبن منتقلی کے لیے مذاکرات کیے تھے۔ بات چیت میں پرتگال نے کنگ عبداللہ ڈائیلاگ سینٹر کو اپنا ہیڈ کوارٹر لزبن منتقل کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

ماضی میں مرکز کے حکام مرکز کی منتقلی کے عمل کو آسانی سے چلانے اور اس کی سرگرمیوں کی پائیداری کو یقینی بنانے کے لیے فکر مند رہے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ مرکز اور پرتگالی حکومت کے درمیان کل جمعہ 29 اکتوبر 2021 کو لزبن میں ہیڈ کوارٹر کے معاہدے پر دستخط ہوئے۔

شاہ عبداللہ مرکز
شاہ عبداللہ مرکز

معاہدے پر شاہ عبداللہ ڈائیلاگ مرکز کے سیکرٹری جنرل فیصل بن عبدالرحمن بن معمر نے دستخط کیے جب کہ پرتگالی حکومت کی طرف سے وزیر مملکت اور خارجہ امور مسٹر آگسٹو سانتوس سلوا نے دستخط کیے۔ شاہ عبداللہ ڈائیلاگ سینٹر کی میزبانی کے بعد لزبن میں اس نوعیت کے بین الاقوامی اداروں کی تعداد 9 ہوگئی ہے۔

اس موقعے پر سینٹر فار گلوبل ڈائیلاگ کے سیکرٹری جنرل فیصل بن معمر نے معاہدے پر دستخط کرنے کے بعد پرتگالی حکومت کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور اس کے نئے راستے میں مرکز کے ہیڈ کوارٹر کی میزبانی کرنے اور اس کے تعاون کے لیے شکریہ ادا کیا۔ اس کی منتقلی کے طریقہ کار کو آسان بنانے میں لزبن کی طرف سے فراہم کردہ سہولیات کا بھی شکریہ ادا کیا۔