.

ایران حوثیوں کو اسلحہ اور پیسہ دے کرتخریبی کردار ادا کر رہا ہے: یمنی صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صدر عبد ربہ منصور ھادی نے کہا ہے کہ ایران یمن کے باغی حوثی گروپ کو اسلحہ اور پیسہ دے کر خطے میں تخریبی کردار ادا کر رہا ہے۔ انہوں نے یہ بات یمن کے لیے امریکا کے ایلچی ٹم لینڈرکنگ سے ملاقات کے دوران کہی۔

ملاقات میں یمنی میدان میں ہونے والی پیش رفت، امن قائم کرنے اور حوثی ملیشیا کی جانب سے قومی اتفاق رائے کے خلاف بغاوت کے بعد شروع کی گئی جنگ کو ختم کرنے پر تبادلہ خیال کیا۔

صدر نے مآرب، شبوا اور تعز گورنریوں میں حوثی باغیوں کی جانب سے بیلسٹک میزائلوں اور ڈرونز کے ذریعے شہریوں کو نشانہ بنانے کی کارروائیوں کا حوالہ دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کے حملوں کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت سیکڑوں عام شہری ہلاک اور ہزاروں کی تعداد میں بے گھر ہوگئے ہیں۔

امریکی ایلچی کو بریفنگ دیتے ہوئے صدر ھادی نے کہا کہ حوثی ملیشیا کی کارروائیوں کے نتیجے میں شہریوں کے جانی نقصان کے ساتھ ان کی املاک کو بھی نقصان پہنچ رہا ہے۔ حوثی ملیشیا ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت نجی املاک کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

صدر ھادی نے کہا کہ یمن کی آئینی حکومت حوثیوں کی دہشت گردی کا مقابلہ کرتے ہوئے عوام کے تحفظ اور انہیں امن کی فراہمی کے لیے کوششیں کر رہی ہے۔

صدر ھادی نے یمن کے تنازع میں ایران کی بے جا مداخلت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ تہران حوثی ملیشیا کو اسلحہ اور پیسہ دے کر تخریبی کردار ادا کر رہا ہے۔