.

اسرائیل کا افریقا میں اپنے مفادات پر ایرانی حملے ناکام بنانے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی ذرائع ابلاغ نے کہا ہے کہ تل ابیب نے افریقا میں ایران کی طرف سے اسرائیلی مفادات پر متعدد حملے ناکام بنا دیے ہیں۔ یہ حملے تین افریقی ممالک میں کیے گئے جن میں مبینہ طور پر اسرائیلی سیاحوں اور کاروباری شخصیات کو قاتلانہ حملوں میں نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی۔

اسرائیلی اخبار’ٹائمز آف اسرائیل‘ کی رپورٹ کے مطابق سمندر پار انٹیلی جنس کارروائیوں کے ذمہ دار ادارے’موساد‘ نے تنزانیا، گھانا اور سینیگال میں اسرائیلی سیاحوں اور کاروباری شخصیات کو نشانہ بنانے کی ایرانی کوششیں ناکام بنائیں۔

گذشتہ4 اکتوبر کو اسرائیلی وزیر دفاع ’بینی گینٹز‘ نے کہا تھا کہ اسرائیل نے قبرص میں اسرائیلی اہداف پر ایرانی حملے ناکام بنائے ہیں۔

بینی گینٹز نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر پوسٹ کردہ ایک ٹویٹ میں کہا کہ دشمن [ایران] نے قبرص میں ہمارے مفادات پر حملوں کی کوشش کی تھی جسے ناکام بنا دیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران اب بھی خطے اور عالمی سطح پر اسرائیل کے لیے ایک چیلنج ہے۔ ہم کسی بھی مقام پر اپنے شہریوں کو درپیش خطرے کو روکنے اور ان کے تحفظ کے لیے ایکشن لیں گے۔

اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ کے دفتر نے بھی تصدیق کی ہے کہ قبرص میں اسرائیلی ارب پتی ٹیڈی ساگی کو قتل کرنے کی کوشش اسرائیلی تاجروں کو نشانہ بنانے کی ایرانی کوشش تھی۔

قبرص میں ایرانی سفارت خانے نے اسرائیل کے ان الزامات کی تردید کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایران نے جزیرے پر اسرائیلیوں پرحملہ کرنے کی کوشش کے الزامات بے بنیاد ہیں۔