.

اخوان سے تعلق؟ جامعہ الازھر کی اہم خاتون تعیناتی کے 24 گھنٹے اندر برطرف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی سب سے بڑی دینی درس گاہ جامعہ الازھر کے فیکلٹی کے قائم مقام ڈین کے طور پر تقرری کے صرف 24 گھنٹے بعد الازہر یونیورسٹی نے فیکلٹی میں فقہ کے شعبے کی پروفیسر ڈاکٹر نجوا عبدالمحسن عبد الفتاح شتا کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا۔

دوسری جانب یونیورسٹی کے چیئرمین ڈاکٹر محمد المحرصاوی نے ڈاکٹر سعیدہ محمد صبح لسانیت ڈیپارٹمنٹ کی چیئرمین اور جامعہ الازھر میں عربی اور اسلامی اسٹڈیز کالج کی ڈٰین تعینات کیا ہے۔ وہ اس سے قبل اسی کالج میں تعلیم اور طلبا کے امور کی نگران رہ چکی ہیں۔

ڈاکٹرنجویٰ کو عہدے سے ہٹانے کی باضابطہ وجہ سامنے نہیں آئی تاہم بعض ذرائع نے ان کے مذہبی جماعت اخوان المسلمون کے ساتھ ہمدردی بتائی جاتی ہے۔ سنہ 2013ء کے دوران جب فوج نے اخوان کے خلاف کریک ڈاؤن کیا تو انہوں نے رابعہ العدویہ گراؤنڈ میں دھرنادینے والے اخوان مظاہرین کی حمایت کی تھی۔

تاہم یونیورسٹی کےچیئرمین کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر نجویٰ نے خود ہی اس عہدے پر معذرت کی تھی۔