.

ایران اپنے ایجنٹوں کے ذریعے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کر رہا ہے : اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کے وائس چیف آف اسٹاف ہرتشے ہیلفی کا کہنا ہے کہ تہران ،،، شام لبنان اور غزہ کی پٹی میں اپنے ایجنٹوں کے ذریعے خطے کا امن خراب کر رہا ہے۔ ہیلفی کا یہ بیان اسرائیلی فوج کے ترجمان افیخائی ادرعی کی زبانی سامنے آیا ہے۔

ہیلفی کے مطابق اسرائیل مخلتف چیلنجوں کا سامنا کرنے میں امریکا کا بنیادی شراکت دار رہے گا اور ساتھ ہی وہ مشترکہ بنیادی اصولوں اور اقدار کی بھی مکمل پاسداری کرے گا۔

ہیلفی نے بتایا کہ اقوام متحدہ میں امریکی خاتون سفیر لنڈا تھامس نے منگل کے روز اسرائیل کے دورے کے سلسلے میں اسرائیلی فوج سے ملاقات کی۔ ترجمان کے مطابق امریکی خاتون سفیر کے دورے کے موقع پر اسرائیلی فوج کے وائس چیف آف اسٹاف سمیت سینئر ذمے داران نے سیکورٹی چیلنجوں اور ان سے نمٹنے کے لیے عملی رد عمل پر روشنی ڈالی۔

اس سے قبل اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ نے منگل کے روز باور کرایا تھا کہ اسرائیلی افواج تہران اور مغرب کے درمیان جوہری مذاکرات کے انجام سے قطع نظر اپنی مفادات کے تحفظ پر کام کرتی رہیں گی۔ بینیٹ کے مطابق ان کا ملک لبنان اور شام میں ایران اور اس کے ایجنٹوں سے نمٹ رہا ہے۔

اسرائیلی وزیردفاع بینی گینٹز
اسرائیلی وزیردفاع بینی گینٹز

دوسری جانب اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ تہران کے خلاف کام کریں۔ انہوں نے باور کرایا کہ اسرائیل ،،، ایران پر روک لگانے کے لیے تمام محاذوں پر کام جاری رکھے گا۔

یاد رہے کہ رواں سال اپریل میں ایران کے ساتھ جوہری بات چیت کے آغاز کے بعد سے تل ابیب ایران کے ساتھ مذاکرات کے حوالے سے ایک سے زیادہ مرتبہ اپنی مخالفت کا اظہار کر چکا ہے۔