.
یمن اور حوثی

عرب اتحاد نے صنعا میں بیلسٹک میزائل ورکشاپ اور زیر زمین گودام تباہ کر دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حیثیت کے تحت کام کرنے والی حکومت کے معاون عرب عسکری اتحاد نے بدھ کی رات صنعا میں کیمپوں اور فوجی اہداف پر فضائی حملے کیے ہیں جن میں حوثیوں کو بھاری جانی اور مالی نقصان پہنچایا گیا ہے۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ صنعا میں ہونے والی کارروائی میں صدارتی رہائش گاہوں کو نشانہ بنایا گیا۔ صنعاء میں بیلسٹک میزائلوں، ڈرون طیاروں کے مراکز اور زیر زمین گوداموں کو تباہ کر دیا ہے۔

اتحاد نے نشاندہی کی کہ ملیشیا صنعا میں کیمپوں اور جگہوں کے استعمال کو بحال اور دوبارہ تیار کر رہی ہے۔ جو لوگ دشمنانہ کارروائیوں میں ملوث ہیں اور دہشت گرد رہ نما جائز فوجی اہداف ہیں جنہیں نشنانہ بنایا جائے گا۔

اتحاد نے کہا کہ ہم نے عام شہریوں اور شہری تنصیبات کو کولیٹرل نقصان سے بچانے کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کی ہیں۔

اتحاد نے زور دیا کہ آپریشن بین الاقوامی انسانی قانون اور اس کے روایتی قوانین کے مطابق ہے۔

اس سے قبل اتحادی افواج نے مآرب میں حوثی ملیشیا کے خلاف گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 15 حملے کیے ہیں۔

عرب اتحاد نے 11 فوجی گاڑیوں کی تباہی اور حوثی ملیشیا کے 95 ارکان کی ہلاکت کی تصدیق کی۔

انہوں نے واضح کیا کہ صنعاء میں آپریشن میں ڈرون سرگرمیوں کے خفیہ مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔