.

انٹیلی جنس آپریشن کے بعد عرب اتحاد کی صنعاء میں صدارتی کیمپ پر بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے عرب عسکری اتحاد نے جمعرات کی رات صنعا میں کیمپوں اور جائز فوجی اہداف پر فضائی حملے کیے۔ اتحادی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے صدارتی کیمپ کو خطرے کے جواب میں اور محتاط انٹیلی جنس آپریشن کے بعد نشانہ بنایا گیا۔

ہتھیاروں کی نقل و حمل

عرب اتحاد نے انکشاف کیا کہ ہم نے صدارتی کیمپ کو حالیہ نشانہ بنانے کے بعد ہتھیاروں کو وہاں سے دوسرے مقامات پر منتقل کرتے دیکھا جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ دہشت گرد رہ نما اور ان کی فوجی تنصیبات چوبیس گھنٹے جائز ہدف ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ شہریوں اور شہری املاک کو کولیٹرل نقصان سے بچانے کے لیے حفاظتی اقدامات کو یقینی بنایا جاتا ہے۔ یہ آپریشن بین الاقوامی انسانی قانون اور اس کے روایتی قوانین کے مطابق ہے۔

بدھ کے روز عرب اتحاد نے صنعا میں بیلسٹک میزائلوں کی ورکشاپ، ڈرون اور زیر زمین گوداموں کو نشانہ بنا کر انہیں تباہ کیا تھا۔