ایران کی قومی کرنسی ریال کی قدرمیں ڈالر کے مقابلے میں ریکارڈ کمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی قومی کرنسی ریال کی قدر میں ڈالر کے مقابلے میں ریکارڈ کمی واقع ہوئی ہے اور اس نے چھے عالمی طاقتوں کے ساتھ جوہری سمجھوتے کی بحالی کی نئی کوششوں کے بعد ریکارڈ نچلی سطح تک ٹھوکرکھائی ہے۔

کرنسی تبادلے کا کاروبار کرنےوالی دو دکانوں اور میڈیا رپورٹس کے مطابق ہفتے کے روز اوپن مارکیٹ میں ایک امریکی ڈالر تین لاکھ ایرانی ریال سے تجاوزکرگیا ہے۔ یہ سطح آخری مرتبہ اکتوبر2020 میں دیکھی گئی تھی جب ریال ڈالر کے مقابلے میں ریکارڈ سطح پرگرگیا تھا۔

تہران کے وسط میں کرنسی کے لین دین کا کاروبار کرنے والے چارتاجروں نے مارکیٹ میں اتارچڑھاؤ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وہ ڈالرفروخت نہیں کررہے ہیں۔

ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015 میں طے شدہ جوہری سمجھوتے کو بچانے کی کوشش کے ضمن میں گذشتہ ہفتے آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں مذاکرات دوبارہ شروع ہوئے تھے لیکن یہ مذاکرات جمعہ کو ختم ہوگئے ہیں اوران میں کسی ٹھوس پیش رفت کا کوئی اشارہ نہیں ملا ہے۔مذاکرات کا اگلا دورآیندہ ہفتے شروع ہونے والا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں