عرب اتحاد کے مآرب میں فضائی حملوں میں مزید280 حوثی جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عرب اتحاد نے گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران میں یمن کےشمالی صوبہ مآرب میں حوثی ملیشیا کے جنگجوؤں کے خلاف سب سے زیادہ فضائی حملے کیے ہیں اور47 کارروائیوں میں ایران کےحمایت یافتہ ملیشیا گروپ کے 280 ارکان ہلاک ہوگئے ہیں۔

حوثیوں کا مآرب میں جاری لڑائی میں ایک دن میں یہ سب سے زیادہ جانی نقصان ہے۔عرب اتحاد نے فضائی حملوں میں حوثیوں کی 34 فوجی گاڑیاں تباہ کردی ہیں۔ان کے علاوہ ان کی گولہ بارود ذخیرہ کرنے کی جگہوں کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

مآرب کے شمال میں العلم کے محاذ پرفوجی ذرائع نے العربیہ کے نامہ نگارکو بتایا ہے کہ یمنی فوج اوراس کی اتحادی عوامی مزاحمتی فورسز نے حوثی ملیشیا سے تعلق رکھنے والے پانچ جنگجوؤں کو حراست میں لے لیا ہے۔

العربیہ کے نامہ نگار کی اطلاع کے مطابق یمنی فورسز نے العلم کے محاذ پر حوثی ملیشیا کے حملے کوپسپا کردیا ہے اور ان کی جوابی کارروائی میں حوثیوں کی متعدد فوجی گاڑیاں تباہ ہو گئی ہیں اور کئی ایک جنگجو بھی مارے گئے ہیں۔

گذشتہ چند گھنٹے کے دوران میں اس علاقے میں حوثیوں اور یمنی افواج کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئی ہیں۔یمنی فوج نے اتوار کو صوبے کے مختلف محاذوں پرشدیدجھڑپوں کی اطلاع دی تھی۔

حوثی ملیشیا نے فروری2021 سے تیل کی دولت سے مالا مال اس صوبے میں یمنی فوج اور اس کی تنصیبات پرحملے جاری رکھے ہوئے ہیں،حالانکہ اقوام متحدہ ،امریکا اور بعض دوسرے ممالک نے بھی حوثیوں سے حملے روکنے کے مطالبات کیے ہیں۔اس صوبہ میں لاکھوں بے گھر افراد بھی خیمہ بستیوں میں مقیم ہیں۔اقوام متحدہ سمیت عالمی اداروں نے خبردارکیا ہے کہ اگرمآرب میں لڑائی جاری رہتی ہے تو شدید سردی میں کیمپوں میں مقیم یمنیوں کی مشکلات میں اضافہ ہوجائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں