امریکی ایوان نمائندگان ایرانی ڈرون طیاروں کی رسّی کھینچنے کے لیے پُر عزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی ایوان نمائندگان میں خارجہ امور کی کمیٹی نے ایرانی ڈرون طیاروں پر روک لگانے کا قانونی بل متعارف کرا دیا۔

اس بل کا نام Stop Iranian Drones Act (SIDA) ہے۔ خارجہ امور کی کمیٹی کے سربراہ گریگوری میکس کے مطابق حالیہ چند ماہ میں ایران اور اس کی اتحادی ملیشیاؤں کی جانب سے ڈرون طیاروں سے حملوں کی جارحیت میں اضافہ ہوا ہے۔

میکس نے مزید کہا کہ "تہران کی اتحادی ملیشیائیں امریکی افواج، تجارتی بحری جہازوں اور ہمارے شراکت داروں کو نشانہ بنا رہی ہیں"۔

دوسری جانب خارجہ امور کی کمیٹی میں شامل سینئر ریپبلکن مائکل کول کا کہنا ہے کہ "ایرانی ڈرون طیارے مشرق وسطی میں ہمارے لیے اور ہمارے اتحادیوں کے لیے مسلسل خطرہ ہیں"۔

یاد رہے کہ امریکی ایوان نمائندگان میں ریپبلکن اور ڈیموکریٹس ارکان کے ایک مجموعے نے رواں ماہ یکم دسمبر کو ایرانی ڈرون طیاروں کی سرگرمیاں روکنے کے لیے ایک قانونی بل پیش کیا تھا۔ بل میں زور دیا گیا ہے کہ ڈرون طیاروں کی سرگرمیوں کے حوالے سے ایران کے ساتھ کسی بھی صورت میں تعاون پر سزا دی جائے۔

واضح رہے کہ ایرانی روایتی ہتھیاروں کے پروگرام پر امریکی پابندیوں کے قانونCAATSA میں ایران کے ساتھ ڈرون طیاروں کی فروخت اور منتقلی کی ممانعت بھی شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں