یمن اور حوثی

یمن : مارب کے جنوبی محاذ پر حوثیوں کا بھاری جانی و مادی نقصان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں سرکاری فوج نے مارب صوبے میں حوثی ملیشیا کی پیش قدمی کو روک دیا۔ عسکری ذرائع کے مطابق العیرف کے جنوب اور جبل البلق کے علاقوں میں گھمسان کی لڑائی میں درجنوں حوثی ہلاک ہوئے۔

اس دوران میں اتحادی طیاروں کی بم باری سے مارب کے جنوبی اور مغربی محاذ پر حوثیوں کی متعدد عسکری گاڑیاں ساز و سامان سمیت تباہ ہو گئیں۔

ادھر یمنی حکومت نے تہران پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ حوثیوں کو مسلسل ہتھیار فراہم کر رہا ہے۔ اس کا مقصد "علاقے میں ایران کے توسیعی منصوبے پر عمل درامد اور فارسی شہنشاہیت کا جاہ و جلال دوبارہ سے حاصل کرنا ہے"۔

یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ اس نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران میں مارب میں حوثی ملیشیا کے خلاف 36 کارروائیں کیں۔ اس دوران میں ملیشیا کی 20 عسکری گاڑیاں اور ڈرون طیاروں کے کنٹرول یونٹ تباہ ہو گئے۔ مزید برآں 190 سے زیادہ حوثی دہشت گرد مارے گئے۔

یمنی فوج کے میڈیا سیل نے باور کرایا کہ سرکاری فورسز نے عوامی مزاحمت کاروں کے ساتھ مل کر مارب صوبے کے مغبی اور جنوبی محاذوں پر حوثی ملیشیا کے خلاف لڑائی میں حصہ لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں