لبنان : پناہ گزین کیمپ دھماکے میں ہلاک ہونے والوں میں حماس کا ذمے دار شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کے ذرائع نے ہفتے کے روز بتایا کہ لبنان کے جنوب میں "برج الشمالی" پناہ گزین کیمپ میں دھماکے میں فلسطینی تنظیم حماس کا بھرتی کا ذمے دار ہلاک ہو گیا۔ یہ کیمپ صور شہر میں واقع ہے۔

یاد رہے کہ جمعے کی شام فلسطینی پناہ گزینوں کے کیمپ میں حماس تنظیم کے گولہ بارود اور اسلحے کے گودام میں زور دار دھماکا ہوا تھا۔ اس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

عسکری ذرائع کے مطابق دھماکے کے سبب حماس کا ہتھیاروں کا گودام جل کر تباہ ہو گیا۔ تاہم حماس نے اس کی تردید کی ہے۔

ہفتے کے روز جاری بیان میں حماس کا کہنا ہے کہ برج الشمالی کیمپ میں پیش آنے والا حادثہ گودام میں شارٹ سرکٹ کا نتیجہ ہے۔ اس گودام میں کرونا کے مریضوں کے لیے مخصوص آکسیجن اور گیس کے سلنڈر اور سینی ٹائزر کا مواد رکھا ہوا تھا۔

تنظیم نے میڈیا میں گمراہ کن اور جھوٹی خبریں پھیلانے کی مذمت کی۔

واضح رہے کہ متعدد فلسطینی مسلح گروپ لبنان میں 10 کے قریب پناہ گزین کیمپوں پر عملی کنٹرول رکھتے ہیں۔ ان گروپوں میں حماس اور فتح موومنٹ شامل ہے۔

تنظیم آزادی فلسطین (پی ایل او) اور لبنانی حکام کے بیچ غیر اعلانیہ سمجھوتے کے تحت لبنانی سیکورٹی فورسز مذکورہ کیمپوں میں داخل نہیں ہوتی ہیں۔ فلسطینی گروپ خود سیکورٹی اقدامات کرتے ہیں اور ہلکے اور درمیانے ہتھیار اپنے پاس رکھتے ہیں۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق لبنان کے پناہ گزین کیمپوں میں 1.74 لاکھ فلسطینی آباد ہیں۔ تاہم مختلف رپورٹوں میں کہا جاتا ہے کہ کیمپوں میں موجود فلسطینیوں کی حقیقی تعداد 5 لاکھ کے قریب ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں