امریکایواے ای سے23 ارب ڈالرکے اسلحہ معاہدے پر’تصفیہ طلب امور‘کےحل کے لیے پُرامید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک عہدہ دار نے اس امید کا اظہارکیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ 23 ارب ڈالر مالیت کے ہتھیاروں کی مجوزہ فروخت کے معاہدے سے متعلق تصفیہ طلب امور کے حل کے لیے کام کیا جاسکتا ہے۔

اس عہدہ دار نے العربیہ انگلش کوبتایا کہ ’’ہم نے حال ہی میں دبئی ایئرشو میں اس امر کی تصدیق کی ہے کہ بائیڈن، ہیرس انتظامیہ یو اے ای کو ایف 35 طیاروں، ایم کیو 9 بی اور دیگراسلحہ کی مجوزہ فروخت کے لیے پُرعزم ہے‘‘۔

انھوں نے کہا کہ ہم اس بات کو یقینی بنانے کے لیے مشاورت جاری رکھے ہوئے ہیں کہ ہمیں اسلحہ کی ترسیل سے پہلے، دوران اور بعد میں امارات کی ذمہ داریوں اوراقدامات کے بارے میں واضح اورباہمی تفہیم حاصل ہو۔

امریکی عہدہ دار نے یہ تبصرہ اس رپورٹ کے منظرعام پرآنے کے بعد کیا ہے جس میں یہ کہا گیا ہے کہ یواے ای امریکا سے طے شدہ اس اسلحہ ڈیل کوخیرباد کہنے پرغور کررہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں