روس اور یوکرین

امریکا کا افغانستان کے لیے مختص عسکری کمک یوکرین کو دینے پر غور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی اور یوکرینی ذمے داران کے مطابق امریکی صدر جو بائیدن کی انتظامیہ افغانستان کی تحلیل شدہ فوج کے لیے مختص فوجی ہیلی کاپٹروں اور دیگر عسکری ساز و سامان کو یوکرین کو دینے پر غور کر رہی ہے۔ اس کا مقصد یوکرین کی سرحد کے نزدیک روسی افواج کے اکٹھا ہونے کے بیچ یوکرین کے دفاع کو مضبوط بنانے کے واسطے اسے جلد مدد فراہم کرنا ہے۔

یوکرین اُس عسکری ساز و سامان کے حصول کے لیے کوشاں ہے جس کی بابت اس نے پینٹاگان کے ذمے داران سے بات چیت کی تھی۔

امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل مطابق امریکی ذمے داران کا کہنا ہے کہ قومی سلامتی کی کونسل نے ابھی تک مذکورہ اسلحہ فراہم کرنے کی منظوری نہیں دی ہے۔ اس لیے کہ امریکی انتظامیہ کسی سفارتی حل تک پہنچنے کی کوشش کر رہی ہے تا کہ روس کو یوکرین پر کسی بھی ممکنہ حملے کا فیصلہ واپس لینے پر قائل کیا جا سکے۔

یوکرین کے ذمے دار نے بتایا ہے کہ یوکرین کی حکومت فضائی دفاعی نظام کے حصول کے واسطے امریکی انتظامیہ پر دباؤ ڈال رہی ہے۔ اس نظام میں زمین سے فضا میں مار کرنے والے اسٹینگر میزائل شامل ہیں۔ یہ میزائل روسی طیاروں کے خلاف یوکرین کے دفاع میں مدد گار ثابت ہوں گے۔

امریکی قومی سلامتی کے ترجمان کے مطابق 2014ء سے اب تک امریکا نے یوکرین کو 2.5 ارب ڈالر کی عسکری امداد فراہم کی ہے۔ اس میں رواں سال بھیجے گئے 45 کروڑ ڈالر بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں