میں اپنی بیٹی کو کرونا کی ویکسین ہر گز نہیں دوں گا : برازیلی صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

برازیل میں کرونا وائرس سے سیکڑوں بچوں کی موت کے باوجود ملک کے صدر جائر بولسنارو کا کہنا ہے کہ وہ اپنی 11 سالہ بیٹی کو کووڈ-19 کی ویکسین نہیں لگوائیں گے۔ برازیلی صدر کے ویکسین مخالف موقف کے سبب صحت کے شعبے کے ماہرین نے ان کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ساتھ ہی بولسنارو کی مقبولیت بھی متاثر ہوئی ہے۔

برازیلی صدر کے مطابق وزیر صحت پانچ جنوری کو ملک میں پانچ سے گیارہ برس کے بچوں کے لیے کرونا کی ویکسین کی مہم کے طریقہ کار کا اعلان کریں گے۔ برازیلی صدر کا کہنا تھا کہ بچوں کو موت کے خطرے کا سامنا نہیں جس کو انہیں ویکسین دینے کا جواز بنایا جائے۔

برازیل میں لوگوں کی بڑی اکثریت بچوں کو کرونا کی ویکسین دینے کی تائید کرتی ہے تاہم صدر بولسنارو کے حامی اس کی شدید مخالفت کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق برازیل میں پانچ سے 11 برس کی عمر کے 301 بچے کرونا میں مبتلا ہو کر اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں