عراقی شخص نے گھرانے کے متعدد افراد کو قتل کر کے خود کشی کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق میں العربیہ کی نامہ نگار کے مطابق بابل میں سیکورٹی فورسز اور منشیات کے بیوپاری کے درمیان مسلح جھڑپوں میں 18 افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

ادھر عراقی میڈیا نے بتایا کہ "دہشت گردی" کے مقدمات کے ایک ملزم نے اپنے گھرانے کے متعدد افراد کو قتل کر کے خود کشی کر لی۔ مرنے والوں میں 12 بچے شامل ہیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق دو گھنٹے سے زیادہ جاری رہنے والی جھڑپیں بابل صوبے کے شمالی ضلع الجبلہ میں ہوئیں۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ جھڑپوں کے نتیجے میں سیکورٹی فورسز کے دو اہل کار زخمی ہو گئے۔ مزید برآں مطلوب گھرانے کے 18 افراد ہلاک ہو گئے جن میں 12 بچے ہیں۔

واضح رہے کہ سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپوں کے بعد مطلوب شخص نے خود ہی بچوں اور اپنے گھرانے کے افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

بابل پولیس نے جمعرات کے روز بتایا تھا کہ مختلف قانونی شقوں کے تحت 41 مطلوب ملزمان کو حراست میں لے لیا گیا۔ یہ کارروائیاں صوبے کی پولیس کے سربراہ کی ہدایات پر عمل میں آئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں