یمن اور حوثی

یمن : عرب اتحاد کا شہریوں سے السوادیہ عسکری کیمپ خالی کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد نے البیضا صوبے میں شہریوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنی جانوں کی سلامتی کے لیے السوادیہ عسکری کیمپ کو خالی کر دیں۔

جمعرات کے روز جاری بیان میں عرب اتحاد نے بتایا کہ حوثیوں نے السوادیہ کیمپ سے دو بیلسٹک میزائل داغے اور شہریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کیا۔ اتحاد کے مطابق حوثی ملیشیا کی جانب سے کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے سلسلے میں قانونی اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

اس سے قبل جمعرات کے روز ہی جاری بیان میں عرب اتحاد نے بتایا تھا کہ اس نے 24 گھنٹوں کے دوران میں حوثی ملیشیا کے خلاف 22 کارروائیاں انجام دیں۔ کارروائیوں میں مارب میں حوثیوں کی 15 عسکری گاڑیاں تباہ ہو گئیں اور ملیشیا کے 150 سے زیادہ ارکان مارے گئے۔

ادھر شبوہ صوبے کے ضلع مرخہ میں حوثیوں کے ایک بیلسٹک میزائل کے حملے میں مشترکہ یمنی افواج کے 14 اہل کار جاں بحق اور 13 زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو عتق ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کے نمائندے کے مطابق یمنی فوج، عوامی مزاحمت کاروں اور عرب اتحاد کے طیارے مارب کے جنوب میں ایران نواز حوثی ملیشیا کے عناصر اور عسکری گاڑیوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ جمعرات کے روز حوثی ملیشیا کی جانب سے مارب پر داغا گیا ایک میزائل الوادی ضلع میں عبیدہ کے کھلے علاقے میں آ کر گرا۔ عسکری ذرائع کے مطابق مارب کے جنوب میں یمنی فوج کے ساتھ لڑائی میں درجنوں حوثی ہلاک ہو گئے۔

ادھر صنعاء میں ذرائع نے بتایا ہے کہ حوثی ملیشیا کی قیادت نے دارالحکومت میں اپنے رہائشی مقامات کو وسیع پیمانے پر خالی کر دیا ہے۔ یہ اقدام حوثیوں کی سپریم سیاسی کونسل کی ہدایات پر عمل درامد کے طور پر سامنے آیا ہے۔ ذرائع کے مطابق صنعاء میں حوثیوں کے معروف رہ نماؤں کی اکثر رہائش گاہیں نیم خالی ہو چکی ہیں۔ اس وقت شہریوں کے بیچ رہائشی علاقوں میں ان رہ نماؤں کے لیے متبادل مسکن تلاش کیے جا رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں