یمن اور حوثی

یمن : پٹرولیم مصنوعات کی سعودی امداد کی چھٹی کھیپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی جانب سے یمن کو امداد کے طور پر پیش کی جانے والی پٹرولیم مصنوعات کی چھٹی کھیپ کل جمعرات کے روز یمن کے عارضی دارالحکومت عدن کی الزیت بندرگاہ پر پہنچی۔ یمن کی ترقی اور تعمیر نو سے متعلق سعودی پروگرام کے تحت فراہم کی جانے والی اس امداد کا مقصد یمن کے آزاد کرائے گئے صوبوں میں بجلی کے پاور پلانٹوں کو چلانا ہے۔

یمن کی سرکاری خرب رساں ایجنسی کے مطابق ایندھن لانے والا بحری جہاز 60 ہزار میٹرک ٹن ڈیزل کی مقدار لے کر عدن کی بندرگاہ میں داخل ہوا۔

آئندہ چند روز میں مزید 30 ہزار میٹرک ٹن ڈیزل آنے کے بعد پٹرولیم مصنوعات کی امداد کی چھٹی کھیپ کے پہنچنے کا عمل مکمل کر لیا جائے گا۔

یمن کے لیے مقررہ پٹرولیم مصنوعات کی امداد کی کُل مالیت 42.2 کرورڑ ڈالر ہے۔ اس کے تحت مجموعی طور پر 1,260,850 میٹرک ٹن ایندھن یمن کی تسلیم شدہ حکومت کے زیر انتظام علاقوں کے تقریبا 80 پاور اسٹیشنوں کو چلانے کے واسطے فراہم کیا جائے گا۔

سعودی عرب کی یہ امداد یمن میں بجٹ کا بوجھ کم کرنے ، توانائی سیکٹر کی سپورٹ کرنے، بجلی اور پٹرولیم مصنوعات فراہم کرنے، اہم منصوبوں کی فنڈنگ، بنیادی خدمات کی دستیابی، معیشت کو سہارا دینے، ترقی کا پہیہ چلانے، کرنسی کو مستحکم کرنے، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی اور عوام کے معاشی حالات بہتر بنانے میں کردار ادا کرے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں