یمن اور حوثی

یمن:عسیلان ڈاریکٹوریٹ حوثی ملیشیا کے قبضے سے آزاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کی شبوہ گورنری کے گورنرعوض العولقی نے کل ہفتے کی شام کہا ہے کہ گورنری میں حوثی ملیشیا کے خلاف جاری آپریشن کامیابی سے آگے بڑھ رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سرکاری فوج اور عرب اتحادی فوج نے حوثی ملیشیا کو شکست دیتے ہوئے عسیلان ڈاریکٹوریٹ کو ایران نواز ملیشیا کے قبضے سے چھڑالیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ حوثی ملیشیا کے خلاف جاری آپریشن میں سعودی عرب کی قیادت میں قائم عرب اتحاد اور مقامی مزاحمت کاروں کی معاونت حاصل رہی ہے۔

گورنر العولقی نے بتایا کہ زمینی پیش قدمی کے دورن عسیلان ڈاریکٹوریٹ کو حوثیوں سے چھڑالیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ شبوہ گورنری کی دوسری ڈاریکٹوریٹ بیحان اور عین میں حوثی ملیشیا کے خلاف فیصلہ کن لڑائی جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گھمسان کی لڑائی کے بعد حوثی ملیشیا کے سیکڑوں جنگجو ہلاک اور بڑی تعداد میں جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

یمن کی سرکاری نیوزایجنسی کے مطابق یمن کی مسلح افواج اور مزاحمتی فورسز بیحان اور عین ڈاریکٹوریٹس کو بھی حوثی ملیشیا کے قبضے سے آزاد کرانے کے لیے پرعزم ہیں اوران کے حوصلے بلند ہیں۔

اسی سیاق میں عمالقہ بریگیڈ کے سربراہ بریگیڈیئر ابوزرعہ المحرمی نے ہفتے کے روز بتایا کہ جنوب مشرقی شبوہ گورنری کی عسیلان ڈاریکٹوریٹ کو حوثی باغیوں کی قید سے چھڑا لیا گیا ہے۔

ادھر عمالقہ فورسز نے یمن کی آئینی فوج کی مدد سے عسیلان ڈاریکٹوریٹ میں وسیع پیمانے پر آپریشن شروع کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں