بحری جہاز پر حوثی حملہ ، امارات کے جوابی اقدام کی سپورٹ کرتے ہیں: جی سی سی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیج تعاون کونسل یمن کے شہر الحدیدہ کے نزدیک اماراتی پرچم بردار بحری کارگو جہاز پر حوثی ملیشیا کے مسلح حملے کی مذمت کی ہے۔

پیر کے روز جاری بیان میں حوثی دھاوے کے جواب میں امارات کے تمام اقدامات کی حمایت کی گئی ہے۔

اس سے قبل کویت کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ حوثیوں کی جانب سے اماراتی پرچم بردار جہاز کا اغوا ایک مجرمانہ عمل ہے جس سے عالمی تجارت کو سنگین خطرہ ہے۔

یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد نے پیر کے روز اعلان کیا تھا کہ ایران نواز حوثی ملیشیا نے متحدہ عرب امارات کا پرچم بردار ایک مال بردار جہاز "روابی" الحدیدہ کی بندرگاہ کی ساحلی حدود سے اغوا کر لیا ہے۔ عرب اتحاد کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ اس جہاز میں جزیرہ السقطری پرقائم سعودی فیلڈ اسپتال کا طبی سامان اور ادویہ لدی ہوئی ہیں اور وہ سعودی عرب میں جازان کی بندرگاہ کی طرف جا رہا تھا۔ اتحاد نے حوثیوں سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری طور پر جہاز کو چھوڑ دیں۔ مزید یہ بھی بتایا گیا کہ "بحری قزاقی" سے نمٹنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔

ادھر یمن کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں حوثیوں کی جانب سے قزاقی کے اس عمل کی مذمت کی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں کی کارروائی بین الاقوامی امن اور عالمی جہاز رانی کی سلامتی دونوں کے لیے سنگین خطرہ ہے۔

واضح رہے کہ عرب اتحاد اور یمنی حکومت کے علاوہ امریکا اور دیگر ممالک بارہا بحیرہ احمر میں بین الاقوامی جہاز رانی کے لیے حوثی ملیشیا کے خطرے سے خبردار کر چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں