یمن اور حوثی

یمن : شبوہ میں گھمسان کی لڑائی اور بیحان میں اتحادی طیاروں کے حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں سرکاری فوج کے العمالقہ بریگیڈز نے منگل کے روز شبوہ صوبے میں بیحان کی سمت پیش قدمی جاری رکھی۔ اس دوران میں دہشت گرد حوثی ملیشیا کو بھاری نقصان پہنچایا گیا۔ کارروائی میں یمن میں آئینی حکومت کے حامی عرب اتحاد کے طیاروں کی معاونت بھی حاصل ہے۔

یمن میں العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں کے نمائندے کے مطابق سرکاری فوج نے مارب کے جنوبی اور مغربی محاذوں پر حوثی ملیشیا کو نقصان پہنچانے کا اعلان کیا ہے۔ اس سے قبل حوثی ملیشیا نے یمنی فوج کے ٹھکانوں کی جانب دراندازی کی کوششیں کیں۔

یمنی فوج کی توپوں نے اور عرب اتحاد طیاروں نے حوثیوں کے ٹھکانوں اور مورچوں پر شدید بم باری اور گولہ باری کی۔ اس کے نتیجے میں حوثی ملیشیا کے درجنوں ارکان ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

عرب اتحاد نے پیر کے روز اعلان میں بتایا تھا کہ اس کی افواج نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران میں مارب میں حوثی ملیشیا کے خلاف 12 کارروائیاں کیں۔ عرب اتحاد کے بیان کے مطابق کارروائیوں میں 5 عسکری گاڑیاں تباہ کر دی گئیں اور 97 حوثی مارے گئے۔

مزید یہ کہ شبوہ صوبے میں بھی باغیوں کے خلاف 23 کارروائیاں عمل میں آئیں۔ ان حملوں میں حوثیوں کی 15 گاڑیاں تباہ ہو گئیں اور مارے جانے والے حوثیوں کی تعداد 133 سے تجاوز کر گئی۔

یمنی فوج نے العمالقہ بریگیڈز اور اتحادی طیاروں کی معاونت سے شبوہ صوبے کے مغرب میں لڑتے ہوئے اپنی پیش قدمی جاری رکھی۔ اس دوران میں ایران نواز حوثی ملیشیا کو وسیع پیمانے پر نقصان اٹھانا پڑا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں