یمن اور حوثی

شبوہ گورنری سے حوثی باغیوں کا صفایا، علاقے پرآئینی حکومت کا کنٹرول بحال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمنی فوج نے شبوہ گورنری کے تمام ڈائریکٹوریٹس کو آزاد کرانے کی تصدیق کی ہے اور البیضاء میں حوثیوں کا پیچھا کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

سدرن جائنٹس بریگیڈز کے میڈیا سینٹر نے پیر کے روز شبوہ گورنری کے تمام اضلاع کی مکمل آزادی کے بعد عین ضلع کی آزادی کی تصدیق کی۔

جائنٹس بریگیڈز کی کمان نے ایک بیان میں آپریشن کے دسویں دن عین ڈاریکٹوریٹ کو آزاد کرانے کے ساتھ آپریشن جنوبی سائیکلون کے تیسرے مرحلے کی تکمیل کا اعلان کیا۔ بیان میں بتایا کہ شبوہ گورنری کے تمام اضلاع کو مکمل طور پر آزاد کرالیا گیا ہے۔

جائنٹس بریگیڈز کی قیادت نے آئینی حکومت اور متحدہ عرب امارات کی حمایت پر سعودی قیادت والے اتحاد کا شکریہ ادا کیا۔

قبل ازیں یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے عرب اتحاد نے پیر کے روز اعلان کیا تھا کہ اس نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مآرب میں حوثی ملیشیا کے خلاف 11 اہداف کو نشانہ بنایا ہے۔

اتحاد نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران شبوہ میں حوثی ملیشیا کے خلاف 38 اہدافی کارروائیاں کیں، جس کے نتیجے میں 29 فوجی گاڑیاں تباہ اور 220 سے زائد حوثی ارکان ہلاک ہوئے۔

پیر کے روز جائنٹس بریگیڈ نے العین ڈاریکٹوریٹ میں تلاشی کا سلسلہ جاری رکھا۔ فوج کے کچھ یونٹوں نے حوثیوں کا پیچھا کرنے کے لیے البیضاء گورنری کے ضلع نعمان کی طرف پیش قدمی کی ہے۔

شبوہ میں حوثیوں کی پسپائی کے بعد یمن کی 17 گورنریاں یمنی آئینی حکومت حیثیت کے کنٹرول میں آ گئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں