کرونا کی روک تھام کے سلسلے میں سعودی امداد تونس پہنچ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کی ہدایت پر مملکت کی جانب سے طبی امداد کی نئی کھیپ ہفتے کے روز تونس کے دارالحکومت پہنچی۔ اس امداد میں 160 ٹن مائع آکسیجن شامل ہے۔ یہ کھپ اس امدادی پُل کے سلسلے میں ہے جس کے انتظامی امور شاہ سلمان امدادی مرکز کی جانب سے انجام دیے جا رہے ہیں۔ اس کا مقصد تونس میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام میں حصہ لینا ہے۔

رادس کے علاقے میں بندرگاہ پر اس کھیپ کے استقبال کے لیے تونس میں سعودی عرب کے سفیر ڈاکٹر عبدالعزیز بن علی الصقر ، تونس کے وزیر صحت علی مرابط اور متعدد سرکاری عہدے داران موجود تھے۔

اس موقع پر تونس کے وزیر صحت نے سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی کو دیے گئے بیان میں تونس کی دائمی سپورٹ پر سعودی فرماں روا ، ولی عہد اور مملکت کی قیادت کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا۔ وزیر صحت کے مطابق مملکت کی جانب سے پیش کردہ طبی امداد پورے ملک میں بہت سے ہسپتالوں اور صحت کے مراکز میں کام آئی۔ اس کے ذریعے تشویش ناک حالت میں مبتلا بہت سے مریضوں کی جان بچائی گئی۔

تونس میں سعودی عرب کے سفیر ڈاکٹر عبدالعزيز بن علی الصقر کا کہنا تھا کہ مملکت روزانہ کی بنیاد پر ثابت کر رہی ہے کہ وہ تمام برادر اور دوست ممالک کی معاونت کرتی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ شاہ سلمان امدادی مرکز دنیا کے تمام حصوں میں انسانی کارروائیوں کی سپورٹ کا شدید خواہاں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں