مصر: نوجوان دلہن کی شادی کے چند گھنٹوں بعد پراسرار موت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مصر میں چند روز قبل شادی کے چند گھنٹے بعد فوت ہونے والی نوجوان خاتون "ہاجر عصام" کی موت نے عوام میں گہرے رنج و غم کی لہر دوڑا دی۔

مصر کے شہر الجیزہ میں استغاثہ نے ہاجر کی موت کی وجوہات جاننے کے لیے پوسٹ مارٹم کا مطالبہ کیا ہے۔

ابتدائی معائنے میں خاتون کے جسم پر تشدد کی کوئی علامت نظر نہیں آئی۔ استغاثہ نے پوسٹ مارٹم مکمل ہونے کے بعد میت کو دفنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ساتھ ہی سیوکرٹی اداروں سے اس واقعے کے متعلق تحقیقاتی رپورٹ بھی طلب کی گئی ہے۔

استغاثہ کے سامنے دیے گئے بیان میں ہاجر کے شوہر اسلام حسن نے بتایا کہ اس کی بیوی غسل خانے میں گئی تھی۔ تاخیر ہونے پر جب اسلام نے دروازہ کھولا تو دیکھا کہ ہاجر زمین پر بے ہوش پڑی ہوئی ہے۔ بعد ازاں ہسپتال منتقل کیے جانے پر ہاجر وہاں دم توڑ گئی۔

اسلام کے مطابق اس کی بیوی شادی پر بہت خوش تھی۔ یہاں تک کہ ہاجر کی غم سے نڈھال ایک سہیلی نے فون پر اسلام کو بتایا کہ غالبا ہاجر شادی کی خوشی برداشت نہ کر سکی اور دنیا سے چل بسی۔

اسلام حسن کئی برس سے دبئی میں بطور انجینئر ملازمت کر رہا ہے۔ ہاجر کے ساتھ اس کی منگنی 5 برس قبل ہوئی تھی۔

اس سے قبل الھرم ہسپتال کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ ہاجر کو گلا گھونٹ کر موت کی نیند سلایا گیا ہے۔ تاہم اس کے شوہر اسلام نے اس بات کو خارج از امکان قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں