داعش خطے کو عدم استحکام سے دوچار کرنے سے باز نہیں آئی: امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ہفتے کے روز امریکی وزارت خارجہ نے شام کے شہر حسکا میں غویران جیل پر داعش کے حملے کی مذمت کی ہے۔ امریکا نے داعش کے قبضے میں موجود تمام قیدیوں اورجیل کے محافظوں کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا۔

اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے ترجمان نیڈ پرائس کے ایک بیان میں کہا کہ امریکا تنظیم [داعش] کی باقیات کا مقابلہ کرنے کے لیے خطے میں اپنے شراکت داروں کے ساتھ کھڑا ہے۔ شامی ڈیموکریٹک فورسز فورسز کے تیز ردعمل اور شمال مشرقی شام میں داعش کے خلاف جنگ جاری رکھنے کے عزم کو سراہتا ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ اگرچہ عالمی اتحاد نے داعش کے حملے کرنے کی صلاحیت کو بری طرح کمزور کر دیا ہے لیکن تنظیم خطے کو غیر مستحکم کرنے کی اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔

بیان میں اس بات پر زور دیا گیا کہ غویران حملہ ان ممالک کی ضرورت کی تصدیق کرتا ہے جہاں سے داعش کے عناصر واپس آنے اور شمال مشرقی شام میں زیر حراست شہریوں کے خلاف مقدمہ چلانے کے لیے آئے تھے۔

یہ بیانات اس وقت سامنے آئے جب ہفتے کی شام میں ایک ویڈیو کلپ میں دکھایا گیا ہے کہ داعش نے جیل کے متعدد محافظوں کو دہشت گرد تنظیم نے پکڑ لیا ہ

العربیہ/الحدث کے ذرائع نے کل ہفتے کو بتایا کہ شامی ڈیموکریٹک فورسز نے بین الاقوامی اتحاد کی فضائی مدد سے الحسکہ میں واقع غویران جیل پر دھاوا بولنے کا عمل شروع کیا۔

العربیہ/الحدث کے نمائندے نے مزید کہا کہ ایس ڈی ایف کی توپ خانے سے بمباری میں جیل سے ملحقہ عمارتوں کو نشانہ بنایا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں