اسرائیل یوکرین سے ہزاروں یہودیوں کو نکالنے کی تیاری کر رہا ہے : رپورٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی اخبار "ہآرٹز" نے پیر کے روز بتایاہے کہ تل ابیب یوکرین کے ہزاروں یہودی شہریوں کو نکالنے کی تیاری کر رہا ہے۔ روس اور یوکرین کے بیچ جنگ چھڑ جانے کی صورت میں اس پر عمل درامد ہو گا۔ اس جنگ کا خطرہ دونوں ملکوں کے درمیان سرحد پر منڈلا رہا ہے۔

اخبار نے نے واضح کیا کہ اسرائیل میں مختلف اتھارٹیوں نے اتوار کے روز ایک اجلاس میں اس معاملے پر بحث کی ہے کہ روس نے یوکرین پر حملہ کیا تو وہاں سے ہزاروں یہودیوں کا انخلا عمل میں لائے جانے کا امکان ہے۔ مغربی رپورٹوں کے مطابق یہ حملہ قریب الوقوع ہے۔ اجلاس میں شامل اتھارٹیوں میں وزیر اعظم کے دفتر کے علاوہ ، وزارت خارجہ ، وزارت دفاع اور یہودی ایجنسی شامل ہے۔

ہآرٹز کے مطابق مشرقی یوکرین میں تقریبا 75 ہزار افراد رہتے ہیں۔ مسلح تنازع شروع ہونے کی صورت میں یہ علاقہ سب سے زیادہ خطرے کی زد میں ہو گا۔ اخبار کا کہنا ہے کہ یہ افراد اسرائیلی شہریت حاصل کرنے کے اہل ہیں۔

اخبار نے واضح کیا ہے کہ عبرانی ریاست طویل عرصے سے مختلف ملکوں سے یہودیوں کے اجتماعی انخلا کے منصوبے رکھتی ہے۔ ضرورت پڑنے پر ان پر عمل کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں