روس اور یوکرین

واشنگٹن نے یوکرین پر روسی حملے کے "عالمی خطرات" سے خبردار کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

واشنگٹن نے یوکرین پر روس کے حملے کے "عالمی سیکورٹی" پر مرتب ہونے والے سنگین خطرات سے خبردار کیا ہے۔ دوسری جانب چین نے امریکا کو باور کرایا ہے کہ روس کے سیکورٹی خدشات کو بھی سنجیدگی سے لیا جانا چاہیے۔

امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن نے آج جمعرات کے روز اپنے چینی ہم منصب وانگ یی سے ٹیلفون پر رابطے میں باور کرایا کہ یوکرین کے خلاف روسی جارحیت سے عالمی امن اور معیشت کو خطرہ ہے۔ یہ بات امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے بتائی۔

پرائس کے مطابق بلنکن نے زور دیا کہ جارحیت میں کمی لانا اور سفارت کاری یہ آگے بڑھنے کے دو راستے ہیں۔

امریکا اور چین کا پرچم
امریکا اور چین کا پرچم

بات چیت میں چینی وزیر خارجہ نے اپنے امریکی ہم منصب کو باور کرایا کہ روس کی جانب سے پیش کردہ سیکورٹی کے منطقی اندیشوں کو سنجیدگی سے لینے کی ضرورت ہے۔

چینی وزارت خارجہ کے بیان کے مطابق وانگ یی نے ٹیلیفون پر رابطے میں میں کہا کہ "عسکری بلاکوں کو مضبوط بنانے یہاں تک کہ توسیع دینے سے علاقائی امن کو یقینی نہیں بنایا جا سکتا"۔

وانگ یی نے بلنکن کو آگاہ کیا کہ اس وقت اولین ترجیح اس بات کو دی جائے کہ امریکا موسم سرما کے آئندہ اولمپکس میں مداخلت سے باز رہے جو بیجنگ میں منعقد ہوں گے۔ چینی وزیر خارجہ نے باور کرایا کہ امریکا کو تائیوان کے معاملے کے حوالے سے بھی "آگ سے کھیلنے سے گریز" کرنا ہو گا۔

اس سے قبل امریکی وزیر خارجہ کی خاتون معاون وینڈی شیرمن نے بدھ کے روز کہا تھا کہ امریکا یہ سمجھتا ہے کہ روسی صدر ولادی میر پوتین تمام دباؤ کے باوجود فروری کے وسط تک یوکرین کے خلاف طاقت کے استعمال کے لیے تیار ہیں۔

ادھر یوکرین میں امریکی سفارت خانے نے ایک بار پھر امریکی شہریوں پر زور دیا ہے کہ یوکرین سے فوری کوچ کو مد نظر رکھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں