یواے ای، بحرین اورمصر کا سربراہ اجلاس؛علاقائی اور بین الاقوامی پیش رفت پرتبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ابوظبی میں متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصرکے لیڈروں نے مشترکہ تعاون کے فروغ اورحالیہ علاقائی اور بین الاقوامی پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

اس سہ فریقی سربراہ اجلاس میں متحدہ عرب امارات کے نائب صدر،وزیراعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشدآلِ مکتوم، ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آلِ نہیان، بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ اور مصر کے صدرعبدالفتاح السیسی نے شرکت کی ہے۔

ان رہ نماؤں نے ابوظبی میں شہری مقامات اور تنصیبات پریمن سے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے حالیہ میزائل حملوں سے پیدا ہونے والی صورت حال سمیت علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر ہونے والی پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

وام کے مطابق ان رہ نماؤں نےاس بات پرزور دیاکہ ان حملوں کا تسلسل خطے کی سلامتی اوراستحکام کے لیے سنگین خطرہ ہے۔اس طرح کے معاندانہ حملے بین الاقوامی قوانین اوراصولوں کی خلاف ورزی ہیں اور یہ عالمی سلامتی اورامن کے لیے بھی ضرررساں ہیں۔

انھوں نے عالمی برادری سے حوثیوں اوردیگر’’دہشت گرد‘‘گروپوں اوران کے حامیوں کے خلاف ایک متفقہ اور سخت مؤقف اختیار کرنے کا مطالبہ کیا۔

مصری صدرعبدالفتاح السیسی اور شاہِ بحرین حمد بن عیسیٰ آل خلیفہ نے متحدہ عرب امارات کے ساتھ اپنے ملکوں کی جانب سے مکمل یک جہتی کا اظہار کیا اوراس کی علاقائی سالمیت کے تحفظ کے لیے کیے جانے والے تمام اقدامات کی حمایت کا اعلان کیا۔

چاروں رہ نماؤں نے اس وقت عرب خطے کودرپیش چیلنجوں پربھی بات چیت کی اورعرب نصب العینوں اور خطے کے شہریوں کے مفاد کے بارے میں باہمی دلچسپی کے امور کے حوالے سےتینوں ممالک کے درمیان مستقل ہم آہنگی اور رابطہ کاری کی اہمیت پرزوردیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں