سعودی عرب:بغداد کے ہوائی اڈے پر’بزدلانہ‘ راکٹ حملوں کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت خارجہ نے بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر جمعہ کے روز ہونے والے ’’دہشت گردی کے بزدلانہ حملے‘‘کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

وزارت نے سعودی پریس ایجنسی کی جانب سے ہفتے کے روز جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ ’’مملکت اس باغیانہ حملے کوواضح طور پر مسترد کرتی ہے جس سے برادر ملک جمہوریہ عراق اور خطے کے استحکام اور اس میں فضائی ٹریفک کے تحفظ کو خطرہ لاحق ہوگیاہے‘‘۔

بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے احاطے اور اس سے ملحقہ امریکی فوج کے زیراستعمال فضائی اڈے کے قریب تین راکٹ گرے تھے جس سے ایک غیراستعمال شدہ سویلین طیارے کو نقصان پہنچا تھا۔

عراقی حکام نے اس حملے میں کسی اور نقصان یا کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں دی۔ اطلاعات کے مطابق متاثرہ طیارہ عراقی ایئرویز کا استعمال میں نہیں تھا اور اس کو ناکارہ قرار دے کر کھڑا کردیا گیا تھا۔

سعودی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ ’’اس طرح کے واقعات دہشت گردی کے خلاف جنگ میں عراق کی مدد کے لیے بین الاقوامی اتحاد کی کوششوں کو کمزورکرتے اورنقصان پہنچاتے ہیں‘‘۔

اس نے عراق کے اپنی سلامتی کے تحفظ کے لیے کیےگئے اقدامات کی مکمل حمایت کا اظہار کیا ہے اور سعودی عرب کے اس مؤقف کا اعادہ کیا ہے کہ وہ ہر قسم کے تشدد، دہشت گردی اورانتہا پسندی کو مسترد کرتاہے۔

حالیہ برسوں میں امریکا اوربعض عراقی حکام نے ایران کے حمایت یافتہ ملیشیا گروپوں پربغداد اور دوسرے علاقوں میں اس طرح کے راکٹ حملوں کے الزامات عاید کیے ہیں۔ یہ گروپ خطے میں امریکی فوج کی موجودگی کے مخالف ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں