یمن اور حوثی

یمن:حوثی ملیشیانے پروپیگنڈے سے انکاری 6 ریڈیواسٹیشن بند کردیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

یمن کے دارالحکومت صنعاء پر قابض حوثی ملیشیا نے چھے ریڈیو اسٹیشن بند ک دیے ہیں۔یمنی صحافیوں کی یونین کا کہنا ہے کہ ان نشریاتی اداروں نے حوثیوں کے پروپیگنڈے کو نشرکرنے سے انکارکردیا تھا۔اس کی پاداش میں حوثیوں نے ان کی نشریات ہی بند کردی ہیں۔

صحافیوں کے سنڈیکیٹ نے وائس آف یمن ریڈیو کے ایک بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ حوثیوں نے اس اسٹیشن کوبند کردیا ہے۔اس میں کہا گیا ہے کہ صنعاء میں حوثی حکام کی سکیورٹی فورسزنے گذشتہ منگل کے روز ریڈیو اسٹیشن پردھاوا بولا اور اسے بند کردیا تھا۔

سنڈیکیٹ کی رپورٹ کے مطابق اس اسٹیشن کوغیرقانونی قراردے کربہانے سے بند کیا گیا تھا اور یہ کہا گیا ہے کہ اس نے نشریاتی امورکے لیے ضروری اجازت نامہ حاصل نہیں کیا تھا۔

اس نے مزید تفصیل بتائے بغیرکہا کہ یمنی دارالحکومت میں پانچ دیگر ریڈیو اسٹیشن بھی اسی انداز میں بند کر دیے گئے ہیں۔

صنعاء سے تعلق رکھنے والے صحافیوں کا کہنا ہے کہ حوثی ان ریڈیو اسٹیشنوں سے نالاں تھے کیونکہ انھوں نے یا توحوثیوں کی حمایت میں ترانوں سمیت پروپیگنڈے کو نشر کرنے سے انکارکردیا تھا یا پھر موسیقی نشر کی ہے جسے حوثی خلافِ اسلام سمجھتے ہیں۔

ایک ریڈیو اسٹیشن کے مالک نے نام ظاہرنہ کرنے کی شرط پر اے ایف پی کو بتایا کہ حوثیوں نے مقامی ریڈیو اسٹیشن بند کردیے ہیں کیونکہ ان کی نشریات یمن کے خلاف دشمنی پرمبنی سمجھی جاتی تھی۔

انھوں نے کہا کہ حوثیوں کا خیال ہے ریڈیواسٹیشنوں کوصرف ایسے پروگراموں کو نشرکرنا چاہیے جن کا مقصد ان کی حمایت کو متحرک کرنا ہواوریمنیوں کوحوثی ملیشیا کے ساتھ محاذِ جنگ کی طرف جانے کی ترغیب دینی چاہیے۔

انھوں نے حوثیوں کے ریڈیونشریات سے متعلق دعووں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ان بندشوں کا وزارت اطلاعات کے قوانین اورضوابط سے کوئی تعلق نہیں کہ ریڈیو اسٹیشنوں نے صنعاء میں حوثی حکام کے طے کردہ قوانین کی خلاف ورزی کی ہے۔

سنڈیکیٹ نے حوثیوں کے ان تمام من مانے اقدامات کی مذمت کی ہے جواظہاررائے کی آزادی کومحدود کرتے ہیں۔اس نے ریڈیو نشریات کو فوری طور پر بحال کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یمن کے بیشترشمالی حصے پر قابض حوثی اقلیتی زیدی عقیدے کے پیروکارہیں۔یہ شیعہ اسلام کی ایک شاخ ہے۔وہ اپنے زیرقبضہ علاقوں میں اسلام کی سخت تشریح کا نفاذ کرتے ہیں۔اس میں لباس، صنفی علاحدگی اور تفریح کے بارے میں سخت قوانین کا نفاذ شامل ہے۔انھوں نے موسیقی کی زیادہ ترشکلوں پربھی پابندی عاید کررکھی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں