حوثیوں نے شہریوں کے لیے خطرہ بننے والے حملے جاری رکھے ہوئے ہیں : واشنگٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزارت خارجہ نے متحدہ عرب امارات پر حوثیوں کے حالیہ بیلسٹک میزائل حملے کی مذمت کی ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے پیر کے روز ایک ٹویٹ میں کہا کہ "ایسے وقت میں جب اسرائیلی صدر روابط مضبوط بنانے اور پورے خطے میں استحکام کو پائیدار بنانے کے مقصد سے متحدہ عرب امارات کا دورہ کر رہے ہیں ،،، حوثیوں کی جانب سے شہریوں کے لیے سنگین خطرے کا باعث بننے والے حملوں کا سلسلہ جاری ہے"۔

اس سے قبل متحدہ عرب امارات کی وزارت دفاع نے اتوار کی شام دہشت گرد حوثی ملیشیا کی طرف سے ملک کی طرف داغے گئے بیلسٹک میزائل کو روکنے اور اسے تباہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ وزارت نے دفاع نےایک بیان میں کہا کہ اس حملے کے نتیجے میں کوئی نقصان نہیں ہوا۔ بیلسٹک میزائل کی باقیات آبادی والے علاقوں سے باہر گریں۔

امارات کی وزارت دفاع کی طرف سے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ فضائیہ اور اتحادی قیادت نے کامیابی سے دشمن کی جگہوں کی نشاندہی کرنے کے بعد یمن میں میزائل لانچنگ کی جگہ اور پلیٹ فارم کو تباہ کر دیا۔

وزارت نے دفاع تصدیق کی کہ وہ کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں۔ ہم ریاست کو حوثیوں کے حملوں سے بچانے کے لیے تمام ضروری اقدامات کر رہی ہے۔

ابوظبی نے گذشتہ پیر کو اعلان کیا تھا کہ اس کے دفاعی اداروں نے ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں کی طرف سے داغے گئے دو بیلسٹک میزائلوں کو روک کر تباہ کر دیا ہے۔ یہ حملہ ابوظبی پر ڈرون اور میزائل حملے میں تین افراد کی ہلاکت کے ایک ہفتے بعد ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں