امریکا : اسلحہ کمپنیوں کی جانب سے یوکرین کے لیے لاکھوں بارودی گولیوں کا عطیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی ریاست ایری زونا میں گولہ بارود تیار کرنے والی ایک کمپنی نے رواں ہفتے اعلان کیا ہے کہ وہ بندوقوں کی دس لاکھ گولیاں یوکرین بھیجے گی۔ یہ اعلان یوکرینی صدر ولودی میر زیلنسکی کی اس اپیل کے بعد سامنے آیا جس میں انہوں نے مزید گولہ بارود حاصل کرنے پر زور دیا تھا۔

امریکی چینل فوکس نیوز کے مطابق AMMO Inc. کمپنی یہ گولیاں بنا ادائیگی کے یوکرین بھیجے گی۔

کمپنی کے چیف ایگزیکٹو فریڈ واگنہیلر کا کہنا ہے کہ "میں آزادی اور جمہوریت پر یقین رکھتا ہوں اور میں سمجھتا ہوں کہ ہمیں عطیات فراہم کرنا چاہئیں"۔

واگنہیلر کے اندازے کے مطابق عطیہ کی جانے والی گولیوں کی مجموعی قیمت 7 لاکھ ڈالر ہے۔

چیف ایگزیکٹو کا کہنا ہے کہ وہ اس وقت حکومت کی جانب سے کھیپ بھیجے جانے کی منظوری کے منتظر ہیں۔ تاہم ان کا نجی طیارہ کھیپ پہنچانے کے واسطے تیار ہے۔

امریکا کی جانب سے یوکرین کے صدر کو بحفاظت ملک سے انخلاء کی پیش کش کی گئی تو ولودی میر زیلنسکی نے جواب میں یہ کہا کہ "مجھے پرواز کی نہیں بلکہ گولہ بارود کی ضرورت ہے"۔

دوسری جانبRemmington Arms کمپنی نے بتایا ہے کہ وہ بھی گولہ بارود یوکرین بھیجے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ کمپنی کے مطابق اس نے یوکرین کے صدر کی اپیل سن لی ہے اور ریمنگٹن کمپنی 10 لاکھ گولیاں یوکرین بھیجے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں