روس اور یوکرین

امریکی ایوان نمائندگان روسی تیل پر پابندی پر غور کر رہا ہے : نینسی پلوسی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی ایوان نمائندگان نینسی پلوسی کا کہنا ہے کہ ایوان روسی تیل کی درآمد پر پابندی عائد کرنے کے قانون پر غور کر رہا ہے۔ مزید یہ کہ کانگریس رواں ہفتے یوکرین کے لیے دس ارب ڈالر کی امداد کی منظوری دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔ یہ اقدام روس کی جانب سے جنگ چھیڑے جانے کے جواب میں کیا جا رہا ہے۔

اتوار کے روز ایک مکتوب میں پلوسی کا کہنا تھا کہ "ایوان نمائندگان اس وقت ایسے طاقت ور قوانین پر غور کر رہا ہے جو عالمی معیشت میں روس کی تنہائی میں اضافہ کر دیں گے ..

زیر غور قانون امریکا میں روسی تیل اور توانائی کی مصنوعات کی درآمد پر پابندی عائد کرے گا۔ روس اور بیلا روس کے ساتھ معمول کے تجارتی تعلقات ختم کر دے گا۔ ساتھ ہی روس کو عالمی تجارتی تنظیم میں شامل ہونے سے روکنے کے لیے ابتدائی اقدام کیا جائے گا"۔

کیوڈو نیوز ایجنسی کے مطابق جاپان کی حکومت روسی تیل کی درآمدات پر ممکنہ پابندی کے حوالے سے امریکا اور یورپی ممالک کے ساتھ بات چیت کر رہی ہے۔

اس سے قبل امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن نے بتایا تھا کہ امریکا روسی تیل کی درآمدات پر ممکنہ پابندی کے حوالے سے اپنے یورپی شراکت داروں کے ساتھ بات چیت کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ مغربی ممالک کی جانب سے روس پر عائد کی گئی پابندیوں میں اب تک توانائی کے سیکٹر کو شامل نہیں کیا گیا ہے تاہم پابندیوں کے نتیجے میں ترسیل میں تعطل کے اندیشے کے سبب عالمی منڈی میں افراتفری پھیلی ہوئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں