یواے ای کے بخاطرگروپ کاتُونس میں 5 ارب ڈالرکے رئیل اسٹیٹ منصوبہ کی بحالی کااعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات میں قائم بخاطرگروپ نے تُونس میں پانچ ارب ڈالرمالیت کے رئیل اسٹیٹ منصوبے کی بحالی کر رہا ہے اورابتدائی مرحلے پر فوری طور پر کام شروع کردے گا۔یہ 2011ء کے انقلاب کے بعد شمالی افریقی ملک میں پہلا بڑا منصوبہ ہے۔

تُونس اپنی معیشت کو فروغ دینے کے لیے غیرملکی سرمایہ کاری کا خواہاں ہے۔تُونسی معیشت برسوں سے جمود کا شکار ہے۔کروناوائرس کی وبا کی وجہ سے یہ سخت متاثر ہوئی ہے اور ملک میں جاری سیاسی ہلچل کی وجہ سے مزید ابترہوگئی ہے۔

تُونس کے سرکاری ذرائع نے گذشتہ جمعہ کو بتایا تھا کہ بخاطرگروپ ماضی میں شروع کیے گئے اس منصوبے کی بحالی کا اعلان کرے گا جسے ملک میں عرب بہاریہ انقلاب کے بعد روک دیا گیا تھا۔2011ء میں برپاشدہ اس انقلاب کے نتیجے میں سابق صدر زین العابدین بن علی کی حکومت کا خاتمہ ہوگیا تھا۔

بخاطرگروپ کے چیئرمین صلاح بخاطرنے ایک پریس کانفرنس میں تصدیق کی کہ اس منصوبے کو بحال کیا جا رہا ہے اور پہلے مرحلے میں لگژری ولاز اور گالف کورس کی تعمیر پر کام شروع کیا جائے گا۔

انھوں نے کہا کہ یہ منصوبہ دارالحکومت تُونس کی شکل بدل دے گا۔اس منصوبے میں کھیلوں کی اکیڈمیاں، ہوٹل، گالف کورس اور تُونس شہرکے شمال میں 250 ہیکٹررقبے پر محیط ولاز شامل ہیں۔توقع ہے کہ اس سے ایک ایسے ملک میں ہزاروں لوگوں کو ملازمتیں ملیں گی جہاں بے روزگاری کی شرح 18 فی صد سے زیادہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں