روس اور یوکرین

روس اور یوکرین نے ایک دوسرے کو مذاکرات کی ناکامی کا ذمہ دار قرار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جمعرات کو یوکرین کے وزیر خارجہ دیمیٹرو کولیبا اور ان کے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف نے یوکرینی بحران کے حل کے لیے مذاکرات کی ناکامی کے الزامات کا تبادلہ کیا۔

دیمیٹرو کولیبا نے کہا کہ لاوروف مذاکرات کے لیے تیار نہیں ہیں اور ماسکو میں اپنے حکام کے پاس واپس جائیں گے۔میں سمجھ رہا تھا کہ تھا کہ لاوروف کو فیصلے کرنے کا اختیار ہے مگر ایسا ہرگز نہیں۔ دوسری طرف لاوروف نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی تجاویز یوکرین تک پہنچا دی ہیں۔ اب ہمیں ان کے جواب کا انتظار ہے۔

ایک پریس کانفرنس کے دوران روسی وزیر خارجہ نے کیف پر شہریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا الزام لگایا اوراس بات پر زور دیا کہ یوکرین کے بحران کو حل کرنے کے لیے سفارت کاری کا کوئی متبادل نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مغرب کا یوکرین کو مہلک ہتھیار فراہم کرنا ایک بہت بڑا اقدام اور خطرناک معاملہ ہے۔

روسی وزیرخارجہ سرگئی لاوروف
روسی وزیرخارجہ سرگئی لاوروف

لاوروف نے اشارہ کیا کہ یوکرینی افواج کے ساتھ اجرتی جنگجو بھی لڑ رہے ہیں۔ اسی تناظر میں انہوں نےکہا کہ یوکرین میں فوجی آپریشن منصوبے کے مطابق جاری ہے۔

روسی وزیر خارجہ نے یوکرین پر الزام لگایا کہ وہ روس کی حمایت یافتہ علیحدگی پسند علاقوں پر حملہ کرنے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔ مغرب نے یوکرین کو اس تنازعے میں داخل ہونے پر مجبور کیا۔

یوکرین کے وزیرخارجہ
یوکرین کے وزیرخارجہ

بچوں کے اسپتال پر بمباری

روسی وزیر خارجہ نے یوکرین کے محصور شہر ماریوپول میں بچوں کے اسپتال پر بمباری کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ یہ عمارت قوم پرست بٹالین کا اڈہ تھی۔

لاوروف نے ترکی کے شہر انطالیہ میں اپنے یوکرینی ہم منصب دیمیٹرو کولیبا کے ساتھ بات چیت کے بعد کہا کہ ازوف بٹالین اور دیگر شدت پسندوں نے ایک طویل عرصہ قبل اس میٹرنٹی وارڈ پر قبضہ کر لیا تھا اور گائنی وارڈ کی تمام خواتین، تمام نرسیں اور تمام معاون عملہ کو نکال دیا گیا تھا۔

کولیبا: ہم کبھی ہار نہیں مانیں گے

یوکرین کے وزیر خارجہ نے کہا کہ لاوروف کے مطالبات کی فہرست کا مطلب ہتھیار ڈالنا ہے اور ان کے ہم منصب کے موقف کا مطلب یہ ہے کہ روس اپنی جنگ جاری رکھے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کا ملک کبھی ہتھیار نہیں ڈالے گا۔

کولیبا نے تصدیق کی کہ انہوں نے لاوروف کے ساتھ بحران کا حل تلاش کرنے کی ہر ممکن کوشش کی۔ ان کے ساتھ انسانی مسائل کے حل کے لیے کوششیں جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

یوکرین کے وزیر خارجہ نے کہا کہ انہوں نے لاوروف کے ساتھ محفوظ انسانی راہداریوں کی فراہمی پر تبادلہ خیال کیا۔

روسی وزیر خارجہ اور ان کے یوکرینی ہم منصب کے درمیان دو طرفہ بات چیت جمعرات کو ترکی کے شہر انطالیہ میں شروع ہوئی۔ یہ بات چیت ایک ایسے وقت میں ہوئی جب یوکرین میں چھ مقامات پر شدید جنگ جاری ہے۔

ترک وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے انطالیہ میں اپنے روسی اور یوکرینی ہم منصب کولیبا کا استقبال کیا۔

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن جنہوں نے بحران کے آغاز کے بعد سے ثالثی کی کوششیں تیز کر دی ہیں۔ بدھ کے روز کہا کہ ترکی یوکرین اور روس دونوں سے بات کر سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں