یمن اور حوثی

سعودی عرب اور امریکہ کی مشترکہ کارروائی، یمن سے دو امریکی خواتین بازیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب نے یمن کے دارالحکومت صنعاء سے دو امریکی خواتین کو بازیاب کرانے کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ان خواتین کو یمنی دارالحکومت صنعاء میں حراست میں لیا گیا تھا۔ انہیں سعودی عرب اور امریکہ کی ایک مشترکہ کارروائی کے ذریعے بازیاب کرایا ہے۔ ان خواتین کو پہلے جنوبی ساحل عدن کی جانب لے جایا گیا اور سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض منتقل کیا گیا۔

سعودی وزارت دفاع کے ترجمان بریگیڈئر جنرل ترکی المالکی کے مطابق یہ خواتین صنعاء میں اپنی خاندان سے ملنے گئی تھیں۔ وہاں ان کے پاسپورٹ ضبط کر لیے گئے اور انہیں تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ان دونوں خواتین کو رائل سعودی ائیر فورس نے یمن سے منتقل کیا اور طبی معائنے کے بعد امریکی حکام نے انہیں وصول کر لیا۔

ادھر امریکی دفتر خارجہ کے ترجمان نے ایک غیر ملکی خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے ریسکیو آپریشن کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ ’ہم نے حوثی ملیشیا کے کنٹرول والے یمن کے علاقے سے دو امریکی شہریوں کی محفوظ واپسی کے لیے کارروائی کی ہے۔‘

اس معاملے سے آگاہ ایک ذریعے کے حوالے سے رپورٹ بتایا گیا ہے کہ یہ خواتین جن کی عمریں 19 اور 20 برس کے آس پاس ہیں، واپس امریکہ پہنچ چکی ہیں۔

امریکی ترجمان نے مزید کہا کہ وہ ’اپنے سعودی اور یمن شراکت کاروں کے شکرگزار ہیں انہوں نے امریکی شہریوں کی محفوظ روانگی میں مدد فراہم کی۔ پرائیویسی سے جڑے معاملات کی وجہ سے ہم مزید تفصیل نہیں دے سکتے۔‘

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں