ایلون مسک کا روسی صدر کو لڑائی کا چیلنج ، چیچن سربراہ کا 'دندان شکن' جواب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

چیچنیا کے سربراہ رمضان قدیروف نے امریکی کمپنی ٹیسلا کے مالک اور دنیا کے امیر ترین آدمی ایلون مسک کے روسی صدر ولادی میر پوتین کو دیے گئے چیلنج کا جواب دیا ہے۔ ایلون نے اپنے چیلنج میں روسی صدر کو "وَن ٹو وَن" لڑنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا تھا کہ مقابلے میں جیتنے والے کو یوکرین دے دیا جائے گا۔

روس کے حلیف قدیروف نے اپنے جواب میں کہا کہ ایلون مسک کو فوری شکست ہو جائے گی۔

انگریزی ویب سائٹ بزنس اِنسائیڈر کی رپورٹ کے مطابق قدیروف نے مسک کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ "میری آپ کو نصیحت ہے کہ پوتین کے ساتھ مقابلہ نہ کریں"۔

اس سے قبل پیر کے روز ایلون مسک نے اپنی ٹویٹ میں روسی صدر ولادی میر پوتین کو "ون ٹو ون" مقابلے کا چیلنج دیا تھا۔ انہوں نے ٹویٹ میں روسی صدر کا نام روسی زبان میں جب کہ بقیہ عبارت انگریزی زبان میں لکھی تھی۔

رمضان قدیروف نے اپنے ٹیلی گرام اکاؤنٹ پر جاری بیان میں پوتین کی جوڈو کی صلاحیتوں کا حوالہ دیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ امریکی ارب پتی (ایلون مسک) محض ایک کاروباری اور ٹویٹر بلاگر ٹھہرے اور ان کے مقابلے میں پوتین حکمت عملی کے حامل ایک عالمی سیاست دان ہیں۔

قدیروف کے نزدیک ایلون مسک کو چیچنیا میں کسی ادارے میں تربیت حاصل کرنا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں