جوبائیڈن کایوکرین کو80 کروڑڈالرکی امداد،طیارہ شکن ہتھیاراورڈرون دینے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن نے یوکرین کو طیارہ شکن نظام اور ڈرون سمیت 80 کروڑڈالر کی اضافی حفاظتی امداد مہیا کرنے کی منظوری دینے کا اعلان کیا ہے۔

بائیڈن نے بدھ کو ٹیلی ویژن پر اپنے خطاب میں کہا کہ امریکا اپنے اتحادیوں اور شراکت داروں کے ساتھ مل کر یوکرین کے لیے امدادی سرگرمیوں کی قیادت کررہا ہے۔اس کے تحت ہم آج بے پایاں سلامتی اور انسانی امداد مہیا کررہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ’’ہم آنے والے دنوں اورہفتوں میں مزید کام جاری رکھیں گے۔ہم پابندیوں کی سزا کے ذریعے صدر ولادی میرپوتین کی معیشت کو کمزورکررہے ہیں، یہ پابندیاں وقت کے ساتھ ساتھ مزید تکلیف دہ ثابت ہوں گی‘‘۔

ان کا کہنا تھاکہ’’امریکا اوراقوام متحدہ جن اصولوں کے ساتھ کھڑے ہیں،وہ اب ’’داؤ پر‘‘لگے ہوئے ہیں‘‘۔ وہ جب یوکرین کے لیے اضافی امدادی پیکج کا اعلان کررہے تھے تو وزیرخارجہ انٹونی بلینکن ،نائب وزیردفاع کیتھلین ہکس اور چیئرمین جائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک میلے ان کے ساتھ کھڑے تھے۔

بائیڈن نے مزید کہا:’’یہ امداد آزادی کے لیے ہے۔ یہ لوگوں کے اپنے مستقبل کا تعیّن کرنے کے حق کے بارے میں ہے۔ یہ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے ہے کہ یوکرین میں روسی صدر ولادی میر پوتین کی فتح کبھی نہیں ہوگی، چاہے وہ میدان جنگ میں کوئی بھی پیش قدمی کرلیں‘‘۔

بائیڈن نے نئے ہتھیاروں کی فہرست بھی پیش کی ہے اور بتایا ہے کہ یوکرین کو کس قسم کے ہتھیارمنتقل کیے جا رہے ہیں۔ان کے بہ قول ان میں 800 طیارہ شکن نظام، 9000 اینٹی آرمرسسٹم، 7000 چھوٹے ہتھیار، دوکروڑ گولیاں،گولہ بارود اور ڈرون شامل ہیں۔

بائیڈن یوکرین کے صدر ولودی میر زیلنسکی کے امریکی قانون سازوں سے خطاب کے چند گھنٹے کے بعد تقریر کر رہے تھے۔یوکرینی صدر نے کانگریس سے ورچوئل خطاب میں اپنے ملک کو روس کے حملے سے بچانے کے لیے مزید اقدامات کا مطالبہ کیا تھا۔

انھوں نے امریکی حکام سے درخواست کی کہ وہ یوکرین کی فضائی حدود میں نوفلائی زون نافذکریں ۔انھوں نے روس کے حملے سے بچنے کے لیے مزید لڑاکا طیارے اور دفاعی نظام مہیا کرنے کی اپیل کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں