بھارتی گھریلو ملازمہ کے ہاتھوں کویتی خاندان کو فضلہ کھلائے جانے کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک گھناؤنے واقعے میں بھارت سے تعلق رکھنے والی ایک گھریلو ملازمہ کی طرف سے بدلہ لینے کے لیے ایک سال تک کویتی خاندان کے کھانے میں اپنا فضلہ شامل کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔

ملازمہ نے اپنے اس بدنام زمانہ فعل کی وجہ یہ بتائی کہ اس کی رہائش کے لیے مختص کردہ کمرہ باقی کمروں سے الگ اور مکان کی چھت پر تھا۔ اس لیے اس نے بدلہ لینے کے لیے اپنے کفیل خاندان کے ساتھ یہ سلوک کیا۔ کویت کی سیکیورٹی سروسز نے جب اس خاتون ملازمہ کا بیان لیا تو اس نے اپنے کمرے کی دوری پر اپنےمالک خاندان سے انتقام لینے کی وجہ قرار دیا۔

تفصیلات کے مطابق ایک سیکیورٹی ذریعہ نے کویتی اخبار’الانبا‘ کو انکشاف کیا کہ بدھ کی صبح ایک شہری نے سیکیورٹی حکام کو ایک رپورٹ پیش کی۔ اس رپورٹ میں اپنی بھارتی ملازمہ کی اس واردات کی تصدیق کے لیے ایک ویڈیو بھی شامل کی گئی تھی۔

ذرائع نے بتایا کہ شہری نے وضاحت کی کہ اہل خانہ کچھ عرصے سے یہ محسوس کررہے تھے کہ گھریلو ملازمہ کے ذریعہ ان کے لیے تیار کردہ کھانے کا ذائقہ ٹھیک نہیں۔ ان کے کھانوں کے ذائقے میں بھی تبدیلی آئی ہے۔ اس لیے انہوں نےملازمہ سے چھپ کر باورچی خانےمیں کیمرہ لگا دیا تاکہ اس کی طرف سے کسی قسم کی ہیرا پھیرا کی جانچ کی جا سکے اہل خانہ کو اس وقت شدید جھٹکا لگا جب نوکرانی نے مائع فضلہ کو ایک برتن میں ڈالا اور پھر اسے کھانے پینے کی اشیاء میں ڈال دیا۔

باورچی خانے کے کمرے کے اندر بنائی گئی ویڈیو اس خاتون کو بھی دکھائی گئی۔ اس نے اعتراف کیا کہ وہ ایسا خاندان کے خلاف انتقام کے لیے کر رہی تھی اور اس نے جان بوجھ کر کھانے پینے کی چیزوں کو دوسرے طریقوں سے بھی آلودہ کیا۔

گرفتار بھارتی لازمہ کوڈائریکٹر سیکیورٹی جنرل نے ڈی پورٹ کرنے کا حکم دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں