العُلا: عراقی فن کار "نصير شمہ" عُود پر موسیقی کی دھنیں بکھیریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے تاریخی مقام العُلا میں ثقافتی سرگرمیوں کے سیزن کی اختتامی تقریب رواں ماہ 24 مارچ کو منعقد ہو گی۔ اس موقع پر جبل عکمہ میں محفل موسیقی کا انتظام کیا گیا ہے۔

اس محفل کو "قدیم زمانوں میں موسیقی" کا عنوان دیا گیا ہے۔ اس محفل میں قدیم زمانوں میں استعمال ہونے والے آلات موسیقی پر دھنیں بجائی جائیں گی۔ اس موقع پر عُود بجانے والے مشہور عراقی فن کار نصیر شمہ اپنی ٹیم کے ساتھ فن کا مظاہرہ کریں گے۔

عوام کو اس فن سے متعلق اس منفرد شام کا بے چینی سے انتظار ہے جس میں قدیم دور کے آلات کے تاروں کو چھیڑ کر خوب صورت دھنیں فضا میں رنگ بکھیریں گی۔

العُلا کے تاریخی مقام ہونے کے تناظر میں یہ محفل موسیقی خصوصی دل چسپی کے پہلو کی حامل ہو گی۔ العلا کو قدیم تجارت کے لیے راستوں کا سنگم شمار کیا جاتا ہے۔ ان راستوں پر سفر کرنے والے مسافر یہاں قائم سرائے خانوں میں سستا لیتے تھے۔ اس دوران میں وہ مختلف مصنوعات کا تبادلہ کیا کرتے تھے اور موسیقی سے بھی لطف اندوز ہوا کرتے تھے۔ اس امر نے العُلا کو مختلف ثقافتوں ، زبانوں اور فنون کو کھلے آسمان کے تلے یکجا کر دیا۔

تاریخی محققین کے مطابق جبلِ عکمہ اور اس کے اطراف واقع چٹانوں سے یہ بات سامنے آتی ہے کہ موسیقی کئی ہزار سال تک العُلا میں زندگی کا حصہ تھی۔ آثار قدیمہ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ چٹانوں پر موجود نقوش سے واضح کرتے ہیں کہ اس زمانے میں موسقیی لوگوں کی زندگی ، عادات اور رواجوں میں اہم مقام رکھتی تھی۔

عراقی فن کار نصیر شمہ کا شمار دنیا میں عود بجانے والے نمایاں ترین فن کاروں میں ہوتا ہے۔ انہیں "یونیسکو کے امن فن کار" کا خطاب دیا گیا۔ نصیر نے دنیا بھر میں مختلف ممالک میں فن کا مظاہرہ کیا۔ وہ موسیقی اور انسانی امور سے متعلق 60 سے زیادہ انعامات اور ایوارڈز حاصل کر چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں