ماسکو میں متعیّن امریکی سفیرطلب، روس کے واشنگٹن سے تعلقات تباہی کے دہانے پر!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

روس میں متعیّن امریکی سفیر کو پیر کے روز ماسکو میں وزارت خارجہ میں طلب کیا گیا ہے جہاں انھیں خبردار کیا گیا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات مکمل طور پر تباہی کے دہانے پرہیں۔

روس کے سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق وزارت خارجہ نے ایک مراسلہ سفیرکے حوالے کیا ہے اور اس میں باورکرایا ہے کہ صدر جو بائیڈن نے اپنے روسی ہم منصب ولادی میرپوتین کے بارے میں ’’ناقابل قبول بیانات‘‘دیے ہیں۔

امریکی سفیرجان سلیوان کے حوالے کیے گئے اس مراسلے میں مبیّنہ طورپر جوبائیڈن کے ان بیانات کا حوالہ دیا گیا تھاجن میں انھوں نے ولادی میرپوتین کو یوکرین پرحملے کا جنگی مجرم قراردیاتھا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ صدربائیڈن کے اس طرح کے بیانات سے روس اور امریکا کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے اور ان کے درمیان تعلقات منقطع ہونے کے قریب پہنچ چکے ہیں۔

ماسکو میں امریکی سفارت خانے نے روسی بیان کا ذکر کیے بغیرٹویٹر پرایک بیان پوسٹ کیا ہے۔سفارت خانہ نے کہاکہ آج @MFA_Russia کے ساتھ ملاقات میں سفیر جان سلیوان نے مطالبہ کیاکہ روس کی حکومت بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کرے،بنیادی انسانی شائستگی کا مظاہرہ کرے اور روس میں قیدتمام امریکی شہریوں بشمول مقدمے سے قبل حراست میں لیے گئے افراد تک قونصلر رسائی کی اجازت دے۔

انھوں نے کہا کہ ہم نے باربارروس میں قید امریکی شہریوں تک قونصلر رسائی کا مطالبہ کیا ہے اور کئی مہینوں سے مسلسل اور نامناسب طریقے سے رسائی سے انکار کیا گیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ مکمل طور پر ناقابل قبول ہے۔

روس میں قیدتین امریکی شہری

امریکی باسکٹ بال اسٹار برٹنی گرنرکو گذشتہ ماہ اس وقت گرفتارکیا گیا تھا جب وہ نیویارک جانے والی پرواز میں سوار ہونے کی کوشش کر رہی تھیں۔روسی حکام نے بتایا کہ ان کے پاس حشیش مائع شکل میں موجود تھی۔امریکی حکام کو اب تک گرنر تک رسائی سے انکار کیا گیا ہے۔

اس معاملہ سے آگاہ ایک ذریعے نے بتایا کہ ایک روسی وکیل نے حال ہی میں اس سے ملاقات کی تھی اور وفاقی رازداری قانون فارم فراہم کیا تھا۔

ایک اور ہائی پروفائل امریکی پال ویلن 2018 سے روسی جیلوں میں قید ہیں۔وہ سابق امریکی میرین ہیں،انھیں جاسوسی کے الزامات میں گرفتار کیا گیا تھا اور 16 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

ایک اور سابق امریکی میرین ٹریورریڈ کوسنہ 2019 میں گرفتار کیا گیا تھا۔ان پرایک سفر کے دوران میں نشے کی حالت میں پولیس افسروں پرحملہ آور ہونے کا الزام عاید کیا گیاتھا اور انھیں روسی عدالت نے نو سال قید کی سزا سنائی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں