روس اور یوکرین

ہمارے پاس 500 یوکرینی قیدی ہیں، تبادلے کے لیے تیار ہیں: ماسکو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یوکرین میں روس کے فوجی آپریشن کا آج 27 رواں روز ہے۔ ادھر ماسکو نے اعلان کیا ہے کہ اس کے پاس 500 سے زیادہ یوکرینی قیدی موجود ہیں اور وہ روسی فوجیوں کے ساتھ ان کے تبادلے کے لیے تیار ہے۔

روس میں انسانی حقوق کی کمشنر تاتیانا موسکالکوفا کا کہنا ہے کہ ان کے ملک نے بین الاقوامی صلیب احمر تنظیم کو ایک فہرست ارسال کی ہے۔ اس میں 500 سے زیادہ قیدیوں کی تفصیلات ہیں۔ یہ بات روسی خبر رساں ایجنسی "انٹرفیکس" نے پیر کی شام بتائی۔

یوکرین میں روس کے فوجی آپریشن کا آغاز 24 فروری کو ہوا تھا۔ سابقہ انٹیلی جنس رپورٹوں کے اندازے کے مطابق یوکرین میں اب تک روس کے ہزاروں فوجی مارے جا چکے ہیں۔ تاہم ماسکو کی جانب سے سرکاری طور پر کسی اعداد و شمار کا اعلان نہیں کیا گیا۔

البتہ گذشتہ دنوں کے دوران میں روس نے یوکرین میں اپنے متعدد اعلی فوجی افسران کی ہلاکتوں کا انکشاف کیا۔ اس سے قبل کرملن کی جانب سے اعلان کیا جا چکا ہے کہ جنگ میں مارے جانے والے یا قیدی بنا لیے جانے والے کسی بھی روسی فوجی یا اس کے اہل خانہ کے حقوق ضائع نہیں ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں