نقشہ : مشرقی یورپ میں نیٹو کے فوجی کہاں اور کتنی تعداد میں تعینات ہیں ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

روس اور یوکرین کے درمیان بحران کے آغاز کے بعد سے شمالی اوقیانوس کے اتحاد "نیٹو" نے مشرقی یورپ کے مممالک میں اپنے فوجیوں کی تعداد میں اضافہ کیا ہے۔ نیٹو کے اعلان کے مطابق وہ اُن ممالک کی تعداد بڑھا کر آٹھ کر دے گا جہاں اس کی لڑنے والی فورسز موجود ہیں۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق بلغاریا، ہنگری، رومانیا اور سلوواکیہ میں نیٹو کے زیر انتظام فوج میں لڑنے والے نئے یونٹوں کو شامل کیا گیا ہے۔

نیٹو کی براہ راست کمان کے زیر انتظام فورسز میں ایک چوتھائی پولینڈ میں موجود ہے۔ پولینڈ کی سرحد کا ایک بڑا حصہ یوکرین سے ملتا ہے۔

امریکی اخبار کی جانب سے شائع کردہ نقشے سے واضح ہوتا ہے کہ نیٹو کے 9 ہزار فوجی اسٹونیا میں ہیں۔ تقریبا اتنے ہی فوجی لیٹویا میں ہیں جب کہ لٹوینیا میں 20 ہزار جنگجو ہیں۔

اس کے مقابل یوکرین کی مغربی سرحد پر سلوواکیا میں نیٹو کے 15100 فوجی، ہنگری میں 24800 فوجی، رومانیا میں 79300 فوجی اور بلغاریا میں 26900 فوجی موجود ہیں۔

واضح رہے کہ 24 فروری کو یوکرین میں فوجی آپریشن شروع کرنے کے بعد ماسکو کئی بار یہ موقف دہرا چکا ہے کہ وہ اپنی مغربی سرحد پر کسی قسم کا خطرہ قبول نہیں کرے گا۔ مزید یہ کہ روس اس موقف پر قائم ہے کہ یوکرین کو غیر جانب دار ملک کی حیثیت سے رہنا چاہیے۔ اس طرح ماسکو کو اطمینان حاصل رہے گا۔

نیٹو اتحاد 30 ممالک پر مشتمل ہے اور اس کا صدر دفتر بیلجیم شہر برسلز میں ہے۔ اس کی تاسیس 1949ء میں عمل میں آئی۔ اس وقت صرف 12 ممالک اس کے رکن تھے۔ یہ ممالک امریکا ، برطانیہ ، کینیڈا ، بیلجیم ، ڈنمارک ، فرانس ، آئس لینڈ ، اطالیہ ، لیگزمبرگ ، ہالینڈ ، ناروے اور پرتگال تھے۔

سال 1952ء میں یونان اور ترکی اور پھر 1955ء میں مغربی جرمنی اور اس کے بعد 1982ء میں ہسپانیہ نیٹو اتحاد کا حصہ بنا۔ اس طرح نیٹو اتحاد میں شریک ممالک کی تعداد 16 ہو گئی۔

تاہم سوویت یونین اور وارسو اتحاد کے ٹوٹنے کے بعد مشرقی یورپ کے ممالک نے نیٹو میں شمولیت اختیار کرنا شروع کر دی۔ 1999ء میں پولینڈ ، ہنگری اور چیک ریپبلک بھی نیٹو میں شامل ہو گئے۔

بعد ازاں 2004ء میں سلووینیا ، سلوواکیہ اور بلغاریا نیٹو اتحاد میں شامل ہوئے۔ اسی سال لیٹویا، لٹوینیا اور اسٹونیا بھی اتحاد کا حصہ بنے۔

سال 2009ء میں البانیا اور کروئشا اور 2017ء میں مونٹی نیگرو نیٹو اتحاد میں شامل ہوئے۔ اس اتحاد میں شامل ہونے والا تیسواں اور اب تک کا آخری ملک شمالی مقدونیا تھا جو 2020ء میں اتحاد کا حصہ بنا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں