روس اور یوکرین

روس یوکرین کے ساحلوں کی ناکہ بندی کرکے کیف کو تنہا کررہا ہے: برطانیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

برطانوی وزارت دفاع نے کل اتوار کوانکشاف کیا ہے کہ روس نے بحیرہ اسود کے یوکرینی ساحل پر ناکہ بندی جاری رکھی ہوئی ہے جو عملی طور پر یوکرین کو بین الاقوامی نیویگیشن سے الگ کر دے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ روسی بحریہ بھی وقتاً فوقتاً پورے یوکرین کے اہداف پر میزائل حملے کرتی رہتی ہے۔

یہ اعلان یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی کے مشیرکی جانب سے اس بات کی تصدیق کے بعد سامنے آیا ہے کہ روسی افواج مشرق میں ان کے ملک کی افواج کو گھیرے میں لینے اور ان کا محاصرہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔

ولیکسی ارستووچ نے کہا کہ کہ یوکرین کی افواج چھوٹے جوابی حملے شروع کر رہی ہیں جب کہ روسی فوج ملک کے مشرق میں انہیں گھیرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

گلیوں میں لڑائی

یوکرین کی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ان کی افواج بہت سے محاذوں پر ثابت قدمی سے لڑ رہی ہیں۔ خاص طور پر جنوب اور مشرق میں فوج پوری طاقت سے مزاحمت کررہی ہیں۔ روسی افواج کچھ جگہوں پر خود کو تبدیل کر رہی ہیں۔

جبکہ انٹیلی جنس نے اشارہ کیا کہ روسی افواج جن علاقوں میں داخل ہوئی ہیں خاص طور پر ملک کے جنوب مشرقی یا مشرق میں جلد ہی ان کے ساتھ گلیوں میں لڑائی ہوگی اور گوریلا حملے کیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں