سعودی عرب: العُلا میں واقع الحجر کا علاقہ کن تاریخی آثار کا حامل ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے ضلع العُلا میں واقع "الحجر" کا علاقہ مملکت کا وہ پہلا مقام ہے جو یونیسکو تنظیم کے عالمی ورثے کی فہرست میں شامل کیا گیا۔ یہاں نِبطی ریاست کے زمانے کی قبروں کے واضح آثار موجود ہیں جو پہاڑوں کے اندر موجود ہیں۔ ان قبروں پر بیرونی طور پر نقش و نگار بنے ہوئے ہیں۔ یہ تعمیراتی فنون میں گہری تہذیب کا عکاس ہیں۔

الحجر کے علاقے کا دورہ کرنے والوں کی توجہ کا مرکز اس پتھر کا حجم ہوتا ہے جو سنگ تراشی اور زینت کے عمل سے گزر کر نبطی ریاست کی علامت بن گیا۔ یہاں 95 قبریں ہیں۔

علاقے کے دورے کے دوران میں سیاحوں کو قبروں میں مدفون بعض شخصیات کا تعارف بھی پیش کیا جاتا ہے۔ ان شخصیات میں معالجین کے علاوہ عسکری شخصیات اور رہ نما شامل ہیں۔

یہاں واقع لحیان بن کوزا کی قبر کو مقامی اور عالمی سطح پر بڑی شہرت حاصل ہے۔ یہ ایک ضخیم چٹان کو تراش کر بنائی گئی ہے اور اس کی لمبائی 27 میٹر ہے۔

یہاں پر لحیان بن کوزا نامی شخص کے لیے ایک محل بھی بنایا گیا تھا۔ یاد رہے کہ وہ ایک عسکری کمانڈر تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں